غیرملکیوں کیلئے تشویشناک خبر،کویت نے بھی سختی کردی،تارکین وطن کو واپس بھیجنے کی تیاریاں

غیرملکیوں کیلئے تشویشناک خبر،کویت نے بھی سختی کردی،تارکین وطن کو واپس ...
غیرملکیوں کیلئے تشویشناک خبر،کویت نے بھی سختی کردی،تارکین وطن کو واپس بھیجنے کی تیاریاں

  



کویت سٹی (نیوز ڈیسک) سعودی عرب سمیت خلیجی ممالک نے اپنے شہریوں کے زیادہ سے زیادہ ملازمتوں کے مواقع پیداکرنے کے لیے غیرملکیوں پر مختلف شعبوں میں کام پر پابندی عائد کررکھی ہے اور اب سعودی عرب کے بعد کویت کی میونسپلٹی کے معاشی و انتظامی سیکٹر نے 60فیصد تارکین وطن کو واپس بھیجنے کی منصوبہ بندی شروع کردی ہے ، کئی تارکین وطن کی تنخواہوں کا جائزہ لینے کے لیے ان کے کنٹریکٹ، عہدوں اور تعلیمی قابلیت کا جائزہ لیاجائے گا،کہ آیا تنخواہوں میں اضافہ ہونا چاہیے یا مزید کم ہونی چاہیں ، اسی طرح کام کی نوعیت اور عہدوں کے نام بھی تبدیل کرنے کافیصلہ کیاگیا۔

کویت ٹائمز کے حوالے سے خلیج ٹائمز نے لکھاکہ وہ لوگ جواپنی نوکری کرنے میں ناکام رہے یا ریگولر کام پر نہیں آتے یا پھر جعلی ڈگری کے حامل ہیں ، نوکریوں سے نکال دیاجائے گاجبکہ میونسپلٹی کے ڈپٹی ڈائریکٹر ولید الجسیم کی نگرانی میں فہرستوں کی تیاری بھی شروع کردی گئی ۔

ذرائع کے حوالے سے بتایاکہ بیشتر تارکین وطن کو ’خصوصی ریفرنس‘ کے ذریعے ملازمتیں دی گئیں جن کے وہ حقدار نہیں ، حتیٰ کہ ان کی تعلیمی قابلیت بھی نوکری سے متعلقہ نہیں ، ان وجوہات کی بناءپر 60فیصدتک تارکین وطن کیلئے نوکریوں کے دروازے بند ہوسکتے ہیں ۔

یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ فروری میں کویت کے سٹیٹ ڈیپارٹمنٹ نے ہدایت کی ہے کہ رواں سال کے اختتام تک غیرضروری تارکین وطن کو نوکریوں سے نکال دیاجائے ۔ واضح رہے کہ تارکین وطن کویت کی آبادی کا 70فیصد ہیں جبکہ حالیہ دنوں میں کویتی پارلیمنٹ نے غیرملکیوں کیلئے بجلی اور پانی کے بلوں میں اضافے کا بل بھی منظور کیاتھا جبکہ اس بل سے مقامی شہریوں کو مستثنیٰ قراردیاگیاتھا۔

مزید : عرب دنیا


loading...