خیبر پختونخوا حکومت ایک اور میدان میں بازی لے گئی، ایسا منصوبہ جس کی سب سے زیادہ ضرورت تھی

خیبر پختونخوا حکومت ایک اور میدان میں بازی لے گئی، ایسا منصوبہ جس کی سب سے ...
خیبر پختونخوا حکومت ایک اور میدان میں بازی لے گئی، ایسا منصوبہ جس کی سب سے زیادہ ضرورت تھی

  



پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک) پسماندہ ممالک کے حکمران اول تو عوام کے لئے کچھ کرنا پسند نہیں کرتے، یا پھر ایسے کام کرتے ہیں کہ جن سے واہ واہ تو خوب ہوجائے لیکن لوگوں کی زندگی میں کوئی حقیقی تبدیلی نہ آئے۔ خیبرپختونخوا کی حکومت نے اس افسوسناک روایت کے برعکس سرکاری سکولوں کی حالت بدلنے کی مہم شروع کرکے ایک نئی مثال قائم کر دی ہے۔ صوبے میں 405 سرکاری سکولوں میں شمسی توانائی فراہم کر دی گئی ہے، تا کہ بچے لوڈ شیڈنگ کے عذاب سے نجات پا کر تعلیم پر توجہ دے سکیں۔

وزیراعظم برائے فروخت، آپ بھی بولی لگاسکتے ہیں

اخبار ایکسپریس ٹریبیون کے مطابق خیبرپختونخوا کے وزیر تعلیم محمد عاطف نے بتایا کہ سینکڑوں سرکاری سکولوں میں سولر پینل نصب کئے جا چکے ہیں، جو ان سکولوں کو کسی تعطل کے بغیر بجلی فراہم کریں گے، جبکہ مزید سکولوں میں یہ سہولت فراہم کرنے کے لئے کام جاری ہے۔

وزیر تعلیم کا مزید کہنا تھا کہ صوبے میں 500 سرکاری سکولوں میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کی بہتر سہولیات فراہم کی گئی ہیں جبکہ سرکاری تعلیمی اداروں کی ایک بڑی تعداد کو ایک انگلش میڈیم سکولوں میں تبدیل کیا گیا ہے۔ صوبے میں سکیورٹی خدشات کے پیش نظر8147 سکولوں کی چار دیواری کی بلندی میں اضافہ کیاگیا ہے، جبکہ 6 ہزار سکولوں میں اضافی کمرے بھی تعمیر کئے گئے ہیں۔

مزید : قومی