واہ رے بھارت تیرے کیا کہنے ؟ بھارت میں چائے بیچنے کے جرم میں سسرالیوں نے نوبیاہتا داماد قتل کر دیا

واہ رے بھارت تیرے کیا کہنے ؟ بھارت میں چائے بیچنے کے جرم میں سسرالیوں نے ...
واہ رے بھارت تیرے کیا کہنے ؟ بھارت میں چائے بیچنے کے جرم میں سسرالیوں نے نوبیاہتا داماد قتل کر دیا

  



ممبئی(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت بھی عجیب ملک ہے جہاں ایک طرف ’’چائے بیچنے والا شخص نریندر مودی وزیر اعظم کے عہدے تک جاپہنچتا ہے لیکن اسی بھارت میں سماجی معاشی تقسیم اس حد تک بڑھ چلی ہے کہ ’’چائے فروخت ‘‘ کرنا ایک شخص کو اتنا مہنگا پڑا کہ اس ’’جرم‘‘ میں سسرال والوں نے آہنی راڈ کے وار کر کے اسے موت کی وادی میں دھکیل دیا ۔

بھارتی ٹی وی ’’اے بی پی نیوز ‘‘ کی ایک خصوصی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ چائے فروخت کرنے سے لے کر وزیر اعظم کے عہدے تک پہنچنے کی وزیر اعظم مودی کی کہانی زبان ذد عام ہے، دنیا بھر کے سیاسی اور صحافتی حلقوں میں اس پربحث اور سیاسی لیڈر اپنی تقریروں میں اکثر نریندرمودی کے چائے بیچنے کا ذکر بھی کرتے ہیں، لیکن، ممبئی میں ’’چائے فروخت‘‘ کرنا ایک شخص کو اتنا مہنگا پڑا کہ اس کے سسرال والوں نے اس کو بے رحمی سے قتل ہی کر دیا۔بھارتی ٹی وی کے مطابق 26 سال کے پنکچ نے 21 سالہ پوجاسے گزشتہ ہفتے شادی کی تھی، شادی سے لڑکی کے گھر والے خوش نہیں تھے، پولیس کے مطابق اس کا سب سے بڑا سبب یہ تھا کہ پنکچ چائے اسٹال کاچلاتا تھا، جو پوجا کے گھر والوں کو پسند نہیں تھا، گزشتہ ہفتے شادی کے بعد دونوں خاندانوں میں ظاہری طور پر پیدا ہونے والی ناراضگی بظاہر ختم بھی ہو گئی تھی اور دنوں میاں بیوی ہنسی خوشی نئی زندگی سے لطف اندوز ہو رہے تھے۔پولیس کو دی گئی درخواست کے مطابق پنکچ کا پورا خاندان گھر میں موجود اور ٹی وی دیکھنے میں مگن تھا کہ اسی اثناء میں پوجا کے گھر کے 8افراد نے پنکچ کے گھر پر دھاوا بول دیا ،پوجا کے گھر والوں نے پنکچ کو گھر میں گھس کر دبوچ لیا اور لوہے کے راڈ سے وار کر کے اسے موقع پر ہی مار دیا اور اس کے ساتھ ہی گھر کے دیگر لوگوں کو بھی مارا پیٹا گیاجس سے پنکچ کے اہل خانہ کے کئی افراد کے سر پھٹ گئے ،جبکہ پوجا کو بھی اس دوران گہری چوٹیں آئیں ۔حملہ آور اس واردات کے بعد بڑے آرام سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ۔پولیس نے ضابطے کی کاروائی کرنے کے بعد مقدمہ درج کر کے ملزمان کی تلاش شروع کر دی ہے ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس