کسی ملک کے شہری کے لئے برطانوی امیگریشن بند نہیں کی گئی ،برطانوی سولسٹر

کسی ملک کے شہری کے لئے برطانوی امیگریشن بند نہیں کی گئی ،برطانوی سولسٹر
کسی ملک کے شہری کے لئے برطانوی امیگریشن بند نہیں کی گئی ،برطانوی سولسٹر

  



لاہور(نامہ نگار خصوصی )برطانوی سولسٹراور ماہرقانون متین ملک نے کہا ہے کہ کسی بھی ملک کے شہری کے لئے برطانیہ کی امیگریشن بند نہیں کی گئی بلکہ قوانین کو سخت کیا گیا ہے۔لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے متین ملک نے کہا کہ برطانیہ جانے کے خواہش مند ایجنٹوں کے بہکاوے میں نہ آئیں ،جعلی پاسپورٹ،ویزے اور غیر قانونی طور پر برطانیہ میں داخل ہونے کے تمام راستے بند کر دئیے گئے ہیں،برطانوی امیگریشن قوانین کو سخت بنا کربرطانوی سرحدوں کو محفوظ بنا دیا گیا ہے ۔برطانوی سولسٹر نے بتایا کہ نئے قوانین کے تحت شادی کی بنیاد پر امیگریشن حاصل کرنے والے کسی بھی فرد کے لئے انگریزی زبان پر عبور،18ہزار 600 پاﺅنڈ سالانہ آمدن اور ٹی بی کا ٹیسٹ پاس کرنا لازم ہے۔انہوں نے کہاکہ برطانیہ میں جائے بغیر پناہ کی درخواست نہیں دی جا سکتی جبکہ 200 پاو ¿نڈ سالانہ فیس ادا کرنے والے طالب علم برطانوی سٹوڈنٹس کی طرح طبی سہولیات کا فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ سٹوڈنٹ،وزٹ اور بزنس ویزے کے حصول کے لئے حقیقی دستاویزات اوراخراجات ظاہر کر کے برطانیہ کا ویزہ باآسانی حاصل کیا جا سکتا ہے۔ 

مزید : لاہور