پولیس وفاق یا صوبوں میں سے کس کے ماتحت ہے ،ہائیکورٹ کا استفسار

پولیس وفاق یا صوبوں میں سے کس کے ماتحت ہے ،ہائیکورٹ کا استفسار

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے نیشنل پبلک سیفٹی کمشن کی عدم موجودگی کے باوجود پولیس افسران کے خلاف چلنے والی محکمانہ انکوائریوں کو کالعدم قرار دینے کے لئے دائر درخواستوں پر وفاقی اور صوبائی حکومت سے جواب طلب کر لیا ہے۔جسٹس محمد قاسم خان نے اس سلسلے میں دائرپولیس افسر ملک شفیع وغیرہ کی درخواست پرایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل کو بھی ہدایت کی ہے کہ آئندہ تاریخ سماعت پر بتایا جائے کہ 18ویں آئینی ترمیم کے بعد پولیس وفاق یا صوبوں میں سے کس کے ماتحت ہے ،درخواست گزار کے وکیل ریاض احمد طاہر نے موقف اختیار کیا کہ پولیس آرڈر کے تحت ملک بھر کی پولیس اور متعلقہ ادارے وفاق کے ماتحت ہیں۔انہوں نے کہا کہ پولیس افسروں اور ملازمین کو نیشنل سیفٹی کمیشن کے ذریعے ہی جزاء یا سزا دی جا سکتی ہے۔انہوں نے کہا کہ قوانین کے تحت آئی جی پنجاب کو کسی افسر کے خلاف محکمانہ کاروائی کا کوئی اختیار حاصل نہیں ۔

اختیار

مزید :

علاقائی -