’’تعلیم و تدریس ایک سائنٹیفک نظام‘‘ کے موضوع پرسیمینارکاانعقاد

’’تعلیم و تدریس ایک سائنٹیفک نظام‘‘ کے موضوع پرسیمینارکاانعقاد

  

اسلام آباد(خصوصی رپورٹ) ’’تعلیم و تدریس ایک سائنٹیفک نظام‘‘ کے موضوع پر پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف نیشنل افیئرز (پائنا) کے زیرِ اہتمام قومی سیمینار منعقد ہوا جس میں کلیدی خطاب امریکی ادارے یونائیٹڈ وی ریچ (United We Reach)کی ایگزیکٹو ڈائریکٹر محترمہ صباحت رفیق نے پیش کیا۔ سیمینار کی صدارت ہائر ایجوکیشن کے ممبر لیفٹیننٹ جنرل (ر) محمد اصغر نے کی۔ یونیورسٹی پروفیسروں، فیکلٹی ڈین اور دانش وروں نے شرکت کی۔سیکرٹری جنرل پائنا جناب الطاف حسن قریشی نے موضوع کا تعارف کرایا۔ نیابت کے فرائض جناب سجاد میر نے سرانجام دیے۔پاکستانی نژاد امریکی سکالر محترمہ صباحت رفیق نے سامعین کو آگاہ کیا کہ تدریس کے نئے طریقے کا اوّلین مقصد معاشرے کے غریب طبقے کے بچوں میں سرمایہ کارانہ مہارت پیدا کرنا ہے۔ انہوں نے تاسف بھرے لہجے میں کہا کہ پاکستان میں اعلیٰ تعلیم سے بہرہ مند ہونے کے باوجود طلبہ نوکری کی تلاش میں مارے مارے پھرتے ہیں جس سے ان کے اہلِ خاندان پر بھی منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں۔محترمہ صباحت نے جناب محمد اصغر کے تعلیمی جہاد میں شرکت کا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ وہ اِس مد میں 2ملین ڈالر (20کروڑ روپے) کا انتظام کریں گی۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ایسے تعلیمی نظام کی ضرورت ہے جو پس ماندگی دور کر سکے۔جناب الطاف حسن قریشی سیکرٹری جنرل پائنا نے محترمہ صباحت رفیق کی کوششوں کو سراہا اور اِس ضمن میں ان کے مستقبل کے لیے نیک تمناؤں کا اظہار کیا۔ پنجاب اسمبلی کی رکن ڈاکٹر فرزانہ نذیر، ماہرِ تعلیم سلمیٰ اعوان، کالم نگار ڈاکٹر حسین پراچہ، دانش ور جاوید نواز اور کالم نگار نعیم سعود نے بھی نئے نظامِ تعلیم و تدریس کے تصور پر اظہارِ خیال کیا۔

پائنا

مزید :

علاقائی -