جیکب آباد کیلئے ایک ارب روپے کا ترقیاتی پیکیج ہیلتھ کارڈز کا اعلان،سندھ والوں کیلئے جیبیں بھر کے لایا ہوں :نواز شریف

جیکب آباد کیلئے ایک ارب روپے کا ترقیاتی پیکیج ہیلتھ کارڈز کا اعلان،سندھ ...

  

جیکب آباد (خصوصی نامہ نگار/ مانیٹرنگ ڈیسک /این این آئی) وزیراعظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ 1991سے پہلے سندھ میں ڈاکو راج تھا ہم نے آکرحالات بہتر کئے ٗ اب آئے ہیں تو بد امنی کے شکار کراچی کو ٹھیک کیا ٗمقامی رکاوٹیں نہ ہوتیں تو کراچی سال پہلے ٹھیک ہو چکا ہوتا ٗ اب صرف نعروں پر ووٹ نہیں ملے گا بلکہ کچھ کر نے سے ووٹ ملے گا ٗ ۔ میں خالی ہاتھ نہیں آیا سندھ والوں کیلئے جیبیں بھر کے لایاہوں ۔اسلام آباد ٗ پنجاب اور بلوچستان کی طرح سندھ اور کے پی کے میں بھی ترقیاتی کام ہو نے چاہئیں ٗ عوام کا درد رکھنے والی حکومت کو حکومت کہاجاتا ہے ٗشرکاء کے جذبے سے محسوس ہوتاہے کہ صوبائی حکومت نے مایوس کیا ہے ٗانشاء اللہ اب حالات بدلیں گے ۔یہاں جلسہ عام سے خطاب کے دور ان وزیر اعظم نواز شریف نے جیکب آباد کیلئے سو کرو ڑروپے کے ترقیاتی پیکج ٗ پاسکو سینٹر ٗ خواتین ووکیشنل سینٹر ٗ دیہاتوں کو بجلی کی فراہمی ٗ100 ٹرانسفارمر ز ٗگیس کی نئی لائنز اور علاقہ کیلئے ہیلتھ کارڈز جاری کر نے کااعلان کیا ۔وزیر اعظم نے شرکاء کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ مجھے بتایا گیا ہے کہ آپ ایک بجے سے یہاں بیٹھے ہیں اور میرا انتظار کررہے ہیں جس پر میں آپ کا شکر گزار ہوں انہوں نے کہاکہ سب سے زیادہ گرمی جیکب آباد میں پڑرہی ہے ٗاتنی گرمی نہ اسلام آباد نہ لاہور نہ کوئٹہ نہ پشاور اور نہ ہی کراچی میں پڑ رہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ آپ میرا انتظار کررہے تھے میں کس منہ سے آپ کا شکریہ ادا کروں ۔ بڑی تعداد میں میری بہنیں جلسے میں آئی ہیں اتنی بڑی تعداد میں اپنی بہنوں کو کبھی کسی جلسے میں نہیں دیکھا میں اپنی بہنوں کو سلام پیش کرتا ہوں ۔ شرکاء صرف میری شکل دیکھنے کیلئے نہیں آئے کچھ آس اور امید لیکر آئے ہیں ٗ شرکاء کے جذبے سے مجھے محسوس ہوتاہے کہ یہاں کی حکومت نے آپ کومایوس کیا ہے ٗاگر مایوس نہ کیا ہوتا تو دن کے ایک بجے شدید گرمی میں اتنی بڑی تعداد میں میرے بھائی ٗ بزرگ اور بہنیں نہ بیٹھی ہوتیں ٗ آپ مایوس نہ ہوں اللہ تعالیٰ کے فضل وکرم سے حالات بدلیں گے ۔ نواز شریف نے کہاکہ میں یقین دلاتا ہوں کہ حالات بدلیں گے ۔ میراسندھ حکومت سے سوال ہے کہ ان بہن بھائیوں کا کچھ تو خیال کیا ہوتا ٗ آپ نے ان کی امیدوں پر پانی پھیر دیا ہے ٗ یہاں سڑکیں ہوتیں ٗ سکول بنتے ٗ ہسپتال بنتے جیکب آباد میں تو پینے کاصاف پانی بھی نہیں ہے انہوں نے کہاکہ مجھے بتایاگیا ہے کہ جیکب آباد میں ہیپاٹائٹس بی سب سے زیادہ ہے انہوں نے کہاکہ دنیا اکیسویں صدی میں اتنا آگے نکل گئی ہے اور جیکب وہی پرانا جیکب آباد ہے ٗکچھ نہیں بدلا ٗ مجھے بہت دکھ ہوتا ہے ۔ نواز شریف نے کہاکہ میں نے اپنے ساتھیوں سے پوچھا ہے کہ میں ان لوگوں کیلئے کیا کرسکتا ہوں ٗیہاں پر توبہت بے روز گاری ہے ٗ غربت ہے ٗ حکومتیں صرف حکومت کر نے کیلئے نہیں ہوتیں ٗ عوام کا درد رکھنے والی حکومت کو حکومت کہاجاتا ہے۔ا آج کراچی جائیں تو آپ کو ہر طرف کچرا اور دھول مٹی نظر آتی ہے ٗ ہر جگہ گندپڑا ہے اور شہر گندا ہوگیا ہے ۔وزیر اعظم نواز شریف نے کہاکہ سب سے پہلے ہم نے کراچی میں امن قائم کیا ٗ1991میں جب ہم آئے تو سند ھ کے دیہات میں امن قائم کیا ٗلوگ رات کے دوبجے بھی بلا خوف سفر کر تے تھے ٗکسی کو کوئی خوف نہیں تھا ٗ ہمارے آنے سے پہلے سندھ میں ڈاکو راج تھا ٗاب پھرہم آئے ہیں تو سب سے پہلے کراچی کو ٹھیک کیا ہے ٗ کراچی بد امنی کا شکار تھا ٗ ہم نے کراچی کو ٹھیک کیا ہے یہ ہمارا فرض ہے اگر وہاں پر مقامی رکاوٹیں نہ ہوتیں تو کراچی سال پہلے ٹھیک ہو چکا ہوتا ٗوقت اس لئے زیادہ لگا کہ وہاں مقامی رکاوٹیں آئیں ۔انہوں نے کہاکہ ہم نے تہیہ کیا تھا کہ جب تک کراچی کے امن کو بحال نہیں کرینگے ٗکام کرتے رہیں گے ٗالحمد اللہ کراچی پہلے سے بہت بہتر ہو چکا ہے ٗکاش وہاں ترقی کے حوالے سے بھی کام بہتر ہوتا ۔وزیر اعظم نے کہاکہ اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے آج آپ سے ہمارا آمنا سامنا ہوا ہے یہ خوشی کی بات ہے ٗ آپ بھی امید کی نظریں لگائے ہماری طرف دیکھ رہے ہیں ٗمیں بھی محبت سے آپ کو دیکھ رہا ہوں ٗمیرا دل چاہتا ہے آپ کیلئے کچھ کروں ٗ نوجوانوں اور بہنوں کیلئے کچھ کروں ۔وزیر اعظم نے کہا کہ میں چاہتا ہوں یہاں کے حالات بدلیں ٗ خوشحالی آئے ٗ بچے پڑھیں ٗ چھوٹے چھوٹے بچوں کو پڑھانے کیلئے گھر میں پیسے نہیں ہیں ٗ بعض اوقات دو وقت کا کھانا بھی مشکل سے ملتا ہے ٗیہ سب چیزیں بدلنی چاہئیں اور انشاء اللہ جلدی بدلنی چاہئیں اس میں دیر نہیں لگنی چاہیے انہوں نے کہاکہ یہاں پر ٹوٹی ہوئی سڑکیں ہیں ٗ سیلاب سے تباہی ہوئی ہے اور کوئی کام نہیں کیا گیا ۔انہوں نے کہاکہ جیکب آباد کیلئے سو کروڑ روپے کااعلان کررہا ہوں ٗسو کروڑ روپے آپ کی خدمت میں پیش کر نے آیا ہوں تاکہ آپ کو پینے کا صاف پانی ملے ٗ آپ کی سڑکیں ٹھیک ہو جائیں ٗ آپ کے حالات اور شہر بہتر ہو جائے اور آپ بھی یہاں پر سکون کا سانس لے سکیں امجھے امید ہے انشاء اللہ اس پیسے کو بہت اچھے طریقے سے خرچ کیا جائیگا اوررقم یہاں کے ڈسٹرکٹ چیئر مین کی نگرانی میں دی جائی گی اور ان کی نگرانی پر ایک دو لوگ مقرر ہونگے اور یہ پیسے آپ کی فلاح وبہبود پر خرچ ہونگے۔اس موقع پر وزیر اعظم نے جلسے میں موجود خواتین کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ میری بہنیں آپ کیا چاہتی ہیں ٗ میں اپنی بہنوں کیلئے ایک جدید ووکیشنل ٹریننگ سینٹر کا اعلان کررہا ہوں میں یہاں خالی ہاتھ نہیں آیا ٗماشاء اللہ جیبیں بھر کے لایا ہوں اگر مجھے کوئی پوچھے کہ پاکستان میں اور بھی علاقے ہیں آپ جیکب آباد کیلئے اتنی بڑی امداد کا اعلان کیوں کررہے ہیں ٗتو میرا جواب یہ ہے کہ پاکستان میں سب سے زیادہ اس کے حق دار جیکب آباد کے لوگ ہیں اگر کسی دوسرے شہر یا ضلع کو سوکروڑ روپے دیا جاناچاہیے تو جیکب آباد کو دو سو کروڑ روپے دیا جانا چاہیے ٗاسلام آباد کو اگر دو سو کرو روپے دیا جاناچاہیے تو جیکب آباد کو چار سو کرورڑ روپے دیا جاناچاہیے یہ آپ کا حق ہے ۔انہوں نے کہاکہ اگر اس طرح کے شہر ہوں اور پھر بھی ہم کہیں پاکستانی ہیں تو یہ بات بنتی نہیں ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ جیکب آباد کے لوگ بھی اتنے ہی خوشحال ہونے چاہئیں جتنے اسلام آباد ٗ لاہور ٗ کوئٹہ اور پشاور کے لوگ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں پہلے بھی جیکب آباد آچکا ہوں اور دوبارہ آؤنگا انہوں نے کہاکہ ہم آپ کی خدمت کر نے آئے ہیں ٗ یہاں کی حکومت اور ہماری حکومت کی خدمت کا فرق آپ کو پتہ چل جائیگا انہوں نے کہاکہ ہم سندھ میں موٹر وے بنا رہے ہیں ٗکوئلے سے بجلی بنانے کے کارخانے لگا رہے ہیں انہوں نے کہاکہ انشاء اللہ جلد لوڈشیڈنگ کی لعنت ہمیشہ کیلئے ملک سے ختم ہو جائیگی انہوں نے کہاکہ مجھے کہا گیا کہ جیکب آباد کیلئے سو ٹرانسفارمر چاہئیں آج اس کا اعلان کررہا ہوں ٗآپ سمجھیں کہ آپ کو مل گئے ہیں اسلام آباد جاکر باقاعدہ لکھ کر دے دونگا ۔انہوں نے کہاکہ میں یہاں پاسکو سینٹر کے قیام کا اعلان کرتا ہوں اور آپ کے دیہاتوں میں بجلی فراہم کی جائیگی ٗجیکب آباد کیلئے گیس کی نئی لائنوں کااعلان کررہا ہوں انہوں نے کہاکہ بے روز گاری کی وجہ سے لوگوں کے پاس اتنے پیسے نہیں کہ اگر کوئی گھر میں بیمار ہو جائے یا کینسر ٗ ہسپپاٹائٹس ٗ دل یا گردوں کی بیماری جیسی کوئی بڑی بیماری لاحق ہو جائے تو لاج کیلئے پیسے نہیں ہوتے ہیں ٗ اگر بیٹا بیمار ہوتا ہے تو والدین دکھ سے پریشان رہتے ہیں ٗبعض اوقات گھر بار اور جائیداد بیچنا پڑتی ہے ٗ لاکھوں رو پے ادھار لینا پڑتے ہیں ٗ انسان بڑی مشکل میں گرفتار ہو جاتا ہے ٗغریب لوگوں کیلئے ہم نے پروگرام بنا رکھا ہے جیکب آباد میں انشاء اللہ ہیلتھ کارڈ جاری کرینگے کسی بھی ہسپتال میں جائیں آپ کا علاج مفت ہوگا اگلے چند روز میں ٹیم روانہ کرونگا وہ فوری طورپر سروے کریگی اور ہیلتھ کارڈ آپ کو پیش کیا جائیگا جو میں کہتا ہوں اس پر عمل کر کے دکھاؤنگا وزیر اعظم نے کہا کہ مجھے یہاں بتایاگیاہے کہ ایک تین سال کا بچہ ہے اسے بلڈ کینسر ہے جس کے پاس علاج کیلئے پیسے نہیں ہیں اس بچے کا فوری طورپر میں علاج کراؤنگا اللہ تعالیٰ ان کو صحت اور تندرستی عطا فرمائے ۔وزیراعظم نے کہاکہ اآٰہی بخش سومرو کی 92سال عمر ہے وہ ہمارے مخلص ساتھی ہیں جن کو میں سلام پیش کرتا ہوں ان کا پرجوش طریقے سے استقبال کریں یہ ہمارے نیک دل ساتھی ہیں وزیر اعظم نے کہاکہ اسلم ابڑو اور اپنے ساتھیوں کے ساتھ ملکر حالات بہتر کرینگے ۔

نواز شریف۔ جیکب آباد

اسلام آباد (آن لائن) وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ چین پاکستان عظیم دوست اور شراکت دار ہونے کے ساتھ ساتھ ایک عالمی طاقت اور دنیا کی قیادت کرنے والا ملک ہے۔ پاکستان اور چین آئرن درادر ہیں،یہ نظریاتی اختلافات کو ہوا دینے کا وقت نہیں ہے بلکہ مسائل کے حل کے لئے ہمیں عدم مداخلت اور باہمی اعتماد کو فروغ دینا ہو گا ۔ ہمیں چین کی ترقی اور خوشحالی سے سبق سیکھنا ہو گا ۔ سی پیک اتحاد کی علامت ہے ۔ جس سے کسی کو بھی کوئی خطرہ نہیں ۔ چین کے ساتھ مل کر منصوبے پر کام کرنے پر فخر ہے ۔چینی صدر شی چن پنگ کی کتاب کے اردو ایڈیشن کی تقریب رونمائی سے خطاب میں وزیراعظم نوازشریف نے کہا کہ کتاب میں سیاست کے ساتھ عام آدمی کی زندگی کا بھی احاطہ کیا گیا ہے،تقریب میں شرکت پر خوشی کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ کتاب کا موضوع چین کی طرز حکمرانی ہے،جس سے گزشتہ 4 دہائیوں میں ترقی سے متعلق پتہ چلے گا، ترقی کے لئے دونوں ممالک کو ثقافتی طور پر قریب آنا ہے، شی چنگ پنگ پاکستان کے بہترین دوست ہیں، نواز شریف نے کہا کہ چینی صدر کے کتاب کے اردو آڈیشن کی رونمائی میں شرکت پر مسرت ہے اور صدر شی جن پنگ چین کے عظیم رہنما اور پاکستان کے عظیم دوست ہیں ان کی کتاب میں سیاست کے ساتھ عام آزادی کی زندگی کا بھی احاطہ کیا گیا ہے چینی صدر کی کتاب نہ صرف چین بلکہ پوری دنیا کے لئے ترقی و خوشحالی کا پیغام ہے جس سے ہمیں چین کی گزشتہ چار دہائیوں میں ترقی سیکھنے کے موقعہ ملے گا ۔ ہمیں ترقی کے لئے ثقافتی اور اخلاقی طور پر ایک دوسرے کے قریب آنا ہے کیونکہ چین ایک عالمی طاقت اور دنیا کی قیادت کرنے والا ملک ہے اور ہمیں چین کی ترقی اور خوشحالی سے سبق سیکھنا ہے ۔ وزیر اعظم نے مخالفین کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں نظریاتی اختلافات کو ہوا دینے کا وقت نہیں ہے اور مسائل کے حل کے لئے مل کر باہمی اتحاد کا مظاہرہ کرنا ہو گا ۔ نواز شریف نے کہا کہ دنیا سے غربت کے خاتمے کے لئے ہمیں متحرک کردار ادا کرنا ہو گا اور مسائل کے حل کے حوالے سے چینی صدر کے تصورات کا خیر مقدم کرتے ہیں ۔ چین کے ساتھ مل کر سی پیک منصوبے پر کام کرنے پر فخر ہے چین اور پاکستان عظیم دوست اور شراکت دار ہیں اور ہم جلد مکمل ہونے والے منصوبون کی تکمیل کی جانب بڑھ رہے ہیں ۔ سی پیک اتحاد کی علامت ہے جس سے کسی ملک کو خطرہ نہیں ہونا چاہئے بلکہ سی پیک سے عوام کی زندگیوں میں مثبت تبدیلی آئے گی اور کئی ملکوں نے سی پیک میں گہری دلچسپی اور سرمایہ کاری کے عزم کا اظہار کیا ہے ۔ نواز شریف نے کہا کہ چینی صدر کے وژن سے ایشیاء ، افریقہ اور دنیا کے کئی دوسرے خطے منسلک ہوں گے ۔سینیٹر مشاہد اللہ نے خطاب کرتے وئے کہا کہ عالمی تعلقات میں پاکستان اور چین کی دوستی بے مثال ہے ۔ چینی صدر اور نواز شریف ترقی ، مربوط رابطوں اور خوشحالی کا مشترکہ وژن رکھتے ہیں ایک خطہ ایک سڑک کا وژن مربوط رابطوں کے ذریعے ترقی و خوشحالی کا وژن ہے کیونکہ سی پیک کے ذریعے 3 ارب آبادی خطے کی مستفید ہو گی ۔ چینی سفیر سن وی ڈونگ نے کہا ہے کہ 2015 میں صدر شی جن پنگ نے پاکستان کا تاریخی دورہ کیا جس سے دونوں ملکوں کے تعلقات کو نئی جہت ملی ۔ چینی صدر کی کتاب سے پاکستانی عوام کو چین کے بارے میں جاننے کا موقع ملے گا ایک خطے اور ایک سڑک کا وژن خطے سے منسلک لوگوں کا مشترکہ وژن ہے ۔

مزید :

صفحہ اول -