استعمال شدہ کوکنگ آئل کا بائیو ڈیزل کے علاوہ دیگر مقاصد کیلئے استعمال بین

استعمال شدہ کوکنگ آئل کا بائیو ڈیزل کے علاوہ دیگر مقاصد کیلئے استعمال بین

ملتان ( سپیشل رپورٹر) پنجاب فوڈ اتھارٹی نے استعمال شدہ کوکنگ آئل فروخت کرنے والے ہوٹل اور ریسٹورانوں کے خلاف سخت کاروائی کا فیصلہ کیا ہے اور اس سلسلے میں استعمال شدہ کوکنگ آئل صرف بائیو ڈیزل بنانے والی کمپنیوں کو فروخت کرنے کا پابند کیا گیا ہے ۔استعمال شدہ کوکنگ آئل کابائیو ڈیزل بنانے کے علاوہ کسی بھی مقصد کے لیے استعمال مکمل بین کر دیا گیا ہے۔اس سلسلے میں ڈی جی فوڈ اتھارٹی نورالامین مینگل کا کہا تھا کہ پنجاب فوڈاتھارٹی کی طرف سے تمام ہوٹل اور ریستوران مالکان کو گزشتہ ماہ مطلع کیا گیا تھا کہ استعمال شدہ کوکنگ آئل اور گھی کی خرید کے لیے پنجاب فوڈ اتھارٹی بائیو ڈیزل بنانے والی کمپنیوں کو رجسٹر ڈ کر رہی ہے جن کی تفصیل پنجاب فوڈ اتھارٹی کے دفتر سے حاصل کی جا سکتی ہے۔سب کو مطلع کیا گیا تھا کہ ہوٹل اور ریسٹوران 15اپریل تک بائیو ڈیزل بنانے والی کمپنیوں سے معاہدے کر لیں۔ 15اپریل کے بعداگر کسی ہوٹل یا ریستوران کے پاس استعمال شدہ تیل کی فروخت کا واضح لائحہ عمل اور ریکارڈ موجود نہ ہو تواس کا لائسنس کینسل کرنے کے علاوہ سخت قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔حتمی تاریخ کے بعد بائیو ڈیزل کے علاوہ استعمال شدہ آئل اور گھی کسی کو فروخت کرنا قانونا جرم ہو گا ایک اندازے کے مطابق صرف لاہور میں روزانہ 30سے 50ٹن استعمال شدہ کوکنگ آئل پیدا ہوتا ہے جس کی زیادہ مقدار اس سے پہلے کسی نا کسی شکل میں دوبارہ کھانے میں استعمال کی جاتی تھی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر