چھوٹے صوبوں کی محرومیاں ختم کئے بغیر ملک ترقی نہیں کر سکتا:سکندر شیرپاؤ

چھوٹے صوبوں کی محرومیاں ختم کئے بغیر ملک ترقی نہیں کر سکتا:سکندر شیرپاؤ

  

چارسدہ ( بیورو رپورٹ) خیبر پختونخوا کے سینئر صوبائی وزیر سکند رحیات خان شیر پاؤ نے کہا ہے کہ چھوٹے صوبوں کے محرومیاں ختم کئے بغیر ملک ترقی نہیں کر سکتا ۔ پختونوں کے نام پر سیاست کرنے والے عناصر نے ذاتی مفادات حاصل کرکے پختونوں کو تاریکی میں دھکیل دیا ہے ۔ دنیا کے جنگی تاریخ کا سب سے بڑا بم گرا کر افغانستان کا مسئلہ مزید گھمبیر بنا دیا گیا ہے ۔ پاک افغان کشیدگی ختم کئے بغیر خطے میں امن قائم نہیں ہو سکتا ۔ سی پیک کے فیصلے فائلوں سے نکال کر خیبر پختونخوا اور فاٹا میں فوری طو ر پر کام کا آغاز کیا جائے ۔ قیام پاکستان سے لیکر اب تک پنجاب چھوٹے قومیتوں کے وسائل پر قابض آرہا ہے ۔ وہ مر زا ڈھیر میں بجلی کے نئے فیڈر کے افتتاخی تقریب سے خطاب کر رہے تھے ۔اس موقع پر پارٹی کے ضلعی عہدیداران بھی موجود تھے ۔ تقریب سے خطاب کر تے ہوئے سکند ر حیات خان شیر پاؤ نے کہا کہ اے این پی دور حکومت میں کرپشن کے نئے اصطلاحات متعارف کئے گئے ۔اے این پی نے اپنے دور حکومت میں پختونوں کے مسائل کو پس پشت ڈال کر ذاتی مفادات حاصل کئے اور مسائل حل کرنے کی بجائے پختونوں کو مسائل کے دلدل میں پھینک دیا ۔ انہوں نے کہاکہ پختون قوم کو ایک سازش کے تحت تقسیم کیا گیا ۔ فاٹا ریفارم کمیٹی نے فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کرنے کی سفارش کی مگر وفاقی حکومت مسئلے کو طول دے رہی ہے اور فاٹا کو کے پی کے میں ضم کرنے کی بجائے قومی دھارے میں شامل کرنے کی باتیں کر رہی ہے جس سے شکوک و شبہات پیدا ہو ئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ قومی وطن پارٹی فاٹا کے حوالے سے وفاقی کابینہ کے فیصلے کو مسترد کر تی ہے ۔ سکند ر شیر پاؤ نے افغانستان میں جنگی تاریخ کے سب سے بڑے بم گرانے کی شدید مذمت کی اور کہا کہ اس قسم کے واقعات سے افغان مسئلہ مزید گھمبیر ہو جائیگا۔ انہوں نے پاک افغان کشیدگی فوری طور پر ختم کرنے کا مطالبہ کیا اور واشگا ف الفاظ میں کہا کہ خطے میں امن پاکستان اور افغانستان میں امن سے وابستہ ہے ۔ انہوں نے وفاق کی طرف سے چھوٹے صوبوں کے ساتھ مسلسل زیادتی پر افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ قیام پاکستان سے لیکر آج تک پنجاب چھوٹے صوبوں کے حقوق کھا رہا ہے جس سے چھوٹے صوبوں میں مایوسی پھیل رہی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ سی پیک منصوبہ کو فائلوں سے نکال کر خیبر پختونخوا اور فاٹا میں سی پیک منصوبوں پر کام کا آغا ز کیا جائے تاکہ اس حوالے سے شکوک و شبہات ختم ہو جائے ۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -