مہمند ایجنسی ،مردم و خانہ شماری کا دوسرا مرحلہ 25اپریل سے شروع ہو گا

مہمند ایجنسی ،مردم و خانہ شماری کا دوسرا مرحلہ 25اپریل سے شروع ہو گا

  

مہمند ایجنسی( نمائندہ پاکستان)مہمند ایجنسی، ملک بھر کی طرح مردم و خانہ شماری کا دوسرا مرحلہ 25 اپریل سے شروع ہوگا۔ پولیٹیکل انتظامیہ، پاک فوج اور محکمہ تعلیم کے اہلکاروں پر مشتمل ٹیم 25 مئی تک تمام علاقوں میں خانہ شماری اور افراد کی گنتی کریگی۔ عمائدین،علماء ، تعلیمیافتہ جوان اور سول سوسائٹی کے افراد بڑھ چڑھ کرحصہ لے اور عملے کے ساتھ مکمل تعاون کریں۔ رولز کے مطابق صحیح مردم شماری کا عمل شفاف طریقے سے پایہ تکمیل تک پہنچایا جائیگا۔ ان خیالات کا اظہار پولیٹیکل ایجنٹ مہمند ایجنسی محمود اسلم وزیر نے جمعہ کے روز غلنئی میں مردم شماری کے حوالے سے منعقدہ اعلیٰ سطح کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقعہ پر اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹس، مہمند رائفلز کا نمائندہ آفیسر، مردم شماری فوکل پرسن اسسٹنٹ ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ اور محکمہ تعلیم کے حکام بھی اجلاس میں موجود تھے۔ پی اے مہمند نے اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ مہمند ایجنسی میں مردم شماری اور خانہ شماری کے لئے پاک فوج ، پولٹیکل انتظامیہ اور محکمہ تعلیم نے تیاریاں مکمل کر لی ہے۔مہمند ایجنسی میں مردم شماری 25 اپریل سے شروع ہوگا جس میں ٹیمیں تما م علاقوں میں خانہ شماری کریگی۔ جبکہ اس کے بعدافراد کی گنتی ہوگی۔ اس لئے مہمند ایجنسی کے ہر مکتبہ فکر طبقے لوگ ٹیموں کے ساتھ مکمل تعاون کرے ۔ اور مقررہ تاریخوں کے دوران ایجنسی سے عارضی طور پر باہر رہنے والے افراد اپنے گھروں میں موجود رہے تاکہ صحیح اعداد و شمار کے ساتھ مردم شماری و خانہ شماری کامیاب بنایا جاسکے۔ اس حوالے سے اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹ نوید اکبر خان نے تفصیلات بتاتے ہو ئے کہا کہ مہمند ایجنسی کو 409 بلاکس میں تقسیم کرکے دو سو چھ ٹیمیں تشکیل دی ہیں۔ جس میں محکمہ تعلیم اور ایف سی اینومینیٹرز پہلے تین دن خانہ شماری کریگی۔ اوراس کے بعد 25 مئی تک مردم شماری مکمل کریگی۔ مردم شماری میں بے گھر افراد کے لئے بھی ایک دن مختص کردیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ رولز کے مطابق جو بندہ جہاں ہوگا وہاں شمار کیا جاتا ہے۔ اس لئے عارضی طور پر گھروں سے باہر افراد مقررہ دنوں اپنے گھروں میں موجود رہے۔ یا اپنے قومی شناختی کارڈ کی کلر کاپی اپنے گھرانے کے سربراہ کے حوالے کریں تاکہ ان کا شمار مہمند ایجنسی کے باشندے کے طور پر ہو سکے۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -