ڈینٹل ٹیکنیشن کو اپنے کلینکس میں پریکٹس کی اجازت دینے کا مطالبہ

ڈینٹل ٹیکنیشن کو اپنے کلینکس میں پریکٹس کی اجازت دینے کا مطالبہ

  

صوابی(بیورورپورٹ)خیبر پختونخوا ڈینٹل ٹیکنیشن ایسوسی ایشن نے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ دور دراز علاقوں میں عوام کو صحت کے بھر پور خدمات انجام دینے والے صوبہ بھر کے تمام پرائیوٹ ڈینٹل ٹیکنشن کو قانونی طور پر اپنے کلینکس میں پریکٹس کی اجازت دی جائے اس سلسلے میں صوبائی وائس چیر مین انوار الحق کی صدارت میں اجلاس ہوا جس میں صوبہ بھر سے ایسوسی ایشن کے ضلعی صدور و جنرل سیکرٹریز نے شرکت کی اجلاس میں تمام ڈینٹل پریکٹیشنز نے اپنے متعلقہ مسائل پر غور وخوص کرنے اور اس کے حل کے لئے ہر قسم اتحاد و اتفاق اور تعاون کا عہد کیا انہوں نے کہا کہ کلینک میں پیشنٹ کیئر اینڈ سیفٹی ، سٹر لائزیشن اور انفیکشن کنٹرول ہماری ذمہ داری ہے جو ہم گورنمنٹ ہسپتالوں میں بھی نبھار رہے ہیں اور ڈینٹل پرائیوٹ پریکٹس میں بھی اس کے ذمہ دار ہے پاکستان بننے سے لیکر اب تک کسی بھی حکومت نے ہمارے حقوق کے لئے کام کیا اور نہ ہی محکمہ صحت نے ہمارے ویلفیئر کے لئے کوئی ٹھوس لائحہ عمل بنایا ہے انہوں نے سیکرٹری ہیلتھ، ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ کیئر کمیشن اور صوبائی اسمبلی کے سپیکر اسد قیصر ، وزیر صحت شہرام خان ترکئی اور وزیر اعلیٰ سے پُر زور مطالبہ کیا کہ ہمیں اپنے بچوں کے رزق حلال کمانے کے لئے پرائیوٹ ڈینٹل پریکٹس کی قانونی اجازت دی جائے کیونکہ ہم سرکاری اداروں سے فارغ التحصیل و سند یافتہ ہیں اور پیشنٹ کیئر اور سنٹر لائزیشن جانتے ہیں لہذا ہمیں پرائیوٹ پریکٹس کی اجازت دی جائے جس سے عوام کوبراہ راست فائدہ پہنچے گا اور سرکاری ہسپتالوں پر مریضوں کا لوڈ کم ہو جائیگا#

مزید :

پشاورصفحہ آخر -