حلب میں اسدی افواج کے علاقے سے ہجرت کرنے والے عام شہریوں کے قافلے پر کار بم حملہ، 70 افراد جاں بحق، 130 زخمی

حلب میں اسدی افواج کے علاقے سے ہجرت کرنے والے عام شہریوں کے قافلے پر کار بم ...
حلب میں اسدی افواج کے علاقے سے ہجرت کرنے والے عام شہریوں کے قافلے پر کار بم حملہ، 70 افراد جاں بحق، 130 زخمی

  

دمشق (ڈیلی پاکستان آن لائن) شام کی خانہ جنگی کے دوران سب سے زیادہ متاثر ہونے والے شہر حلب نے ایک اور بم دھماکے کا زخم اپنے سینے پر سہہ لیا ہے جس کے نتیجے میں 70  افراد جان کی بازی ہار گئے جبکہ 130 سے زیادہ  زخمی ہوگئے ہیں ،جن میں سے کئی زخمیوں کی حالت انتہائی تشویش ناک بتائی جا رہی ہے اور ہلاکتوں میں مزید اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے ۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق حلب میں اسدی افواج اور باغیوں کے زیر تسلط علاقوں میں 30 ہزار کے قریب لوگ پھنسے ہوئے ہیں جنہیں ایک سے دوسری جگہ منتقل کیا جانا ہے تاہم اسدی افواج کے نرغے سے نکلنے والے گاڑیوں کے بڑے قافلے پر بم دھماکہ کردیا گیا۔

مقامی صحافیوں کا کہنا ہے کہ دھماکہ خیز مواد ایک کار میں نصب تھا جو باغیوں کے علاقے کی طرف ہجرت کرنے والے قافلے سے ٹکرا ئی گئی۔ اس خوفناک دھماکے کے نتیجے میں ہر طرف بچوں اور خواتین کی لاشوں کے ڈھیر لگ گئے۔ سرکاری ٹی وی کے مطابق  اس کار بم حملے میں خواتین اور بچوں سمیت کم از کم 70 افراد جاں بحق جبکہ 130 سے زیادہ  زخمی ہوئے ہیں۔  اکثر زخمیوں کی حالت سخت تشویشناک ہے اور جاں بحق افراد کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔ 

دوسری جانب انسانی حقوق کے اداروں کا کہنا ہے کہ اس دھماکے کے نتیجے میں خواتین اور بچوں سمیت جاں بحق  افراد کی تعداد کہیں زیادہ ہے اور ہلاکتوں میں مزید  اضافے کا خدشہ ہے۔ آج حلب کے قریب ہونے والے دھماکے کی ویڈیوز اور تصاویر دیکھ کر یہ اندازہ لگانا مشکل نہیں ہے کہ بہت بڑی تعداد میں جانی نقصان ہوا ہے اور اس میں اضافے کا خدشہ ہے۔

اس دھماکے کے بعد اسدی افواج کے زیر تسلط علاقوں سے ہجرت کرنے والے 5 ہزار اور باغیوں کے علاقے سے مہاجرت اختیار کرنے والے 2200 افراد پھنس گئے ہیں۔

مزید :

عرب دنیا -اہم خبریں -