14 سالہ بچہ اپنے گھر سے کاروبار شروع کرکے ماہانہ لاکھوں روپے کمانے لگا

14 سالہ بچہ اپنے گھر سے کاروبار شروع کرکے ماہانہ لاکھوں روپے کمانے لگا

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) 12سال کی عمر میں، جب اکثر بچے خود سے سکول کے لیے تیار نہیں ہوپاتے، برطانیہ میں ایک بچے نے گھر بیٹھ کر ایک کاروبار شروع کیا اور آج دو سال بعد لاکھوں روپے کما رہا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق اس بچے کا نام چارلی گریفتھس ہے ۔ اس نے دوسال قبل ’ماحول دوست‘ موم بتیاں بنانے کا کام شروع کیا اور اس کی موم بتیاں دنوں میں بے حد مقبول ہو گئیں جس پر اس نے ’ہُڈ پلس مے‘ (Hood+May)کے نام سے ایک کمپنی بنا لی اور باقاعدہ طور پر ماحول دوست موم بتیاں بنانے کا کاروبار شروع کر دیا۔ چارلی یہ موم بتیاں شیشے کے جارز میں بناتا ہے جو تادیر جلتے رہنے کی صلاحیت رکھتی ہیں اور ان میں وہ ایسا مواد استعمال کرتا ہے جو ماحول میں خطرناک کیمیکلز بھی نہیں چھوڑتا۔ چارلی کا کہنا ہے کہ وہ سکول سے گھر واپس آ کر اپنا ہوم ورک کرتا ہے اور پھر موم بتیاں بنانے لگ جاتا ہے۔ پہلے اس نے یہ کام اپنے بیڈروم میں شروع کیا تاہم اب اس کے والدین نے اسے ایک الگ کمرہ دے دیا ہے جس میں وہ صرف موم بتیاں بناتا ہے اور لاکھوں روپے ماہانہ کما رہا ہے۔

مزید : صفحہ آخر