حکومت اور گسٹارہنماؤں کے درمیان آج اجلاس میں 2کمیٹیاں تشکیل دیئے جانے کا امکان

حکومت اور گسٹارہنماؤں کے درمیان آج اجلاس میں 2کمیٹیاں تشکیل دیئے جانے کا ...

کراچی(این این آئی)ماہ مارچ میں سندھ بھر کے اساتذہ کے احتجاج کے نتیجے میں ہونیوالے معاہدے کی روشنی میں حکومت سندھ اور گسٹا رہنماؤں کے درمیان آج( پیر) ممکنہ اجلاس میں 2کمیٹیاں تشکیل دیئے جانے کا امکان ہے۔ پہلی کمیٹی مینجمنٹ کیڈر رولز میں ترامیم کیلئے بنائی جائے گی جبکہ دوسری کمیٹی سال2012 میں بھرتی ہونیوالے اساتذہ کی اسکروٹنی کرے گی۔گسٹا نے مجوزہ سکروٹنی کمیٹی کو ایک ماہ کی مدت میں اسکروٹنی رپورٹ پیش کرنے کا پابند بنانے کا عندیہ دیدیاہے۔تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ سکولز ٹیچرز ایسوسی ایشن (گسٹا)کی جانب سے28مارچ کو کراچی پریس کلب پر احتجاج کے بعد ہونیوالے معاہدے پر عملدرآمد کیلئے آج پیر کو محکمہ تعلیم سندھ اور گسٹا کے درمیان اہم اجلاس منعقد ہو گا۔جس میں مینجمنٹ کیڈر کے رولز میں ترمیم کیلئے کمیٹی تشکیل دی جائے گی۔کمیٹی میں محکمہ تعلیم کے افسران اور گسٹا کا ممبر بھی شامل ہوگا۔دوسری کمیٹی سال2012 میں بھرتی اساتذہ کی اسکروٹنی کرے گی مجوزہ کمیٹی کراچی ،خیر پور ،گھوٹکی سمیت سندھ کے دیگراضلاع میں بھرتی ہونیوالے اساتذہ کی اسکروٹنی کرے گی۔سال2012 میں مختلف کیڈر میں بھرتی اساتذہ گذشتہ 7سالوں سے تنخواہوں سے محروم ہیں۔اس ضمن میں گورنمنٹ سکولز ٹیچرز ایسوسی ایشن (گسٹا)سندھ کے صدر حاجی اشرف خاصخیلی نے بتایا کہ سال 2012 میں بھرتی اساتذہ کے لئے بننے والی مجوزہ اسکروٹنی کمیٹی کو ایک ماہ کے اندر اپنی اسکروٹنی رپورٹ پیش کرنے کا پابندکریں گے کیونکہ یہ معاملہ پہلے ہی 7برسوں سے تاخیرکاشکارہے۔مزید طویل وقت دیکر معاملے کوالتوامیں ڈالنا نہیں چاہتے۔ان کاکہناتھاکہ سال2012کی جو بھرتیاں جائز اور قواعد وضوابط کے تحت ہوں گی انہیں فوری تنخواہیں جاری کی جائیں گی۔

کمیٹیاں تشکیل

مزید : علاقائی