فواد چوہدری دہشت گردی کو مقامی چیلنجز کا نام دے رہے ہیں، مرتضیٰ وہاب

فواد چوہدری دہشت گردی کو مقامی چیلنجز کا نام دے رہے ہیں، مرتضیٰ وہاب

کراچی (اسٹاف رپورٹر) وزیراعلیٰ سندھ کے مشیر برائے اطلاعات ، قانون و اینٹی کرپشن سندھ بیرسٹر مرتضیٰ وہاب کا فواد چوہدری کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ فواد چوہدری دہشت گردی کو مقامی چیلنجز کا نام دے رہے ہیں، اپنی نااہلی پر پردہ ڈالنے کے لیے پیپلز پارٹی پر الزام تراشیاں کی جارہی ہیں۔ بیڑسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ ملک کو کون لوٹ رہا ہے،ملک کا بچہ بچہ جانتا ہے، تحریک انصاف دہشت گردی لے واقعات کو اکا دکا واقعات کہہ رہی ہے۔ بیڑسٹر مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہ فواد چوہدری کی تقریریں نفرت کے پھیلاؤ کا سب بن رہی ہیں انہوں نے کہا کہ فواد چوہدری تحریک انصاف کیلئے میر جعفر ہیں، فواد چوہدری عمران خان کو دیوتا کے سنگھاسن سے نیچے اتاریں تو کچھ نظر آئے۔مشیر اطلاعات سندھ بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ فواد چوہدری کی ہر تقریر اپنے منہ میاں مٹھو بننا ہے، تحریک انصاف سے معاشی چیلنجز تو سنبھالے نہیں جارہے اور بات کرتے ہیں دہشت گردی کی۔انہوں نے کہا کہ فواد چوہدری بہت جلد تحریک انصاف سے بھی نکالے جائیں گے ، فواد چوہدری سراپا جھوٹ کا دوسرا نام ہے۔ مشیراطلاعات سندھ بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ فردوس شمیم نقوی شاہ سے زیادہ شاہ کے وفادار بننے کی کوشش کررہے ہیں، فردوس شمیم نقوی کی حکومت نے نو ماہ میں مہنگائی کے علاوہ قوم کو کچھ نہیں دیا۔بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ فردوس شمیم نقوی پیپلزپارٹی کی فکر چھوڑیں اپنی پارٹی کی گروپنگ ختم کرائیں۔انہوں نے کہا ہے کہ سندھ اسمبلی میں تیس لوگ چار گروپوں میں تقسیم ہیں۔انہوں نے کہا ہے کہ معشیت کی تباہی، قومی خزانے کی بربادی اور آئین شکنی پی ٹی آئی حکومت کے کارنامے ہیں۔بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ لینڈ مافیا، قبضہ مافیا اور لوٹے پی ٹی آئی میں جمع ہوگئے ہیں۔مشیر اطلاعات سندھ بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ بلاول بھٹو زرداری کہہ چکے کہ اٹھارویں ترمیم کو چھیڑا تو دما دم مست قلندر ہوگا۔بیرسٹر مرتضیٰ وہاب سلیکٹیڈ حکومت اور انکے حواریوں کی سیاست گالم گلوچ سے زیادہ کچھ نہیں۔مشیر اطلاعات سند ھ بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کے بڑے سے لیکر چھوٹے تک سب تہذیب سے عاری ہیں۔ مشیر اطلاعات قانون و اینٹی کرپشن سندھ بیرسٹر مرتضیٰ وہاب کا ایم کیوایم کی پریس کانفرنس پر ردعمل میں کہا کہ پرامن دھرتی پر لسانیت کا بیج بونے والے آج کس منہ سے دوسروں پر الزام تراشی کررہے ہیں۔

مزید : صفحہ اول