سٹیج ڈراموں میں بیہودہ رقص کا مخالف ہوں :راشد محمود

سٹیج ڈراموں میں بیہودہ رقص کا مخالف ہوں :راشد محمود
 سٹیج ڈراموں میں بیہودہ رقص کا مخالف ہوں :راشد محمود

  

لاہور (فلم رپورٹر)سینئر اداکار راشد محمود نے کہا کہ موجودہ دور کمرشل سٹیج ڈراموں کا معیار دن بدن کم سے کم ہورہا ہے۔اچھا اور معیاری کام ناپید ہوگیا ہے۔ آج تھیٹر میں ہونے والے سٹیج ڈراموں میں ماں ، بہن اور بیٹی کے کردار نہ ہونے کے برابر ہیں اور بد قسمتی سے اب ہمیں اچھے رائٹر بھی میسر نہیں ۔نئے آنے والے لڑکے خود ہی رائٹر اور ڈائریکٹر بن کر ڈرامے پیش کریں گے تو ڈرامے کا معیار کبھی بہتر نہیں ہو گا ۔راشد محمودنے کہا کہ ہم نے سٹیج ڈرامے کے لئے دن رات ایک کیا ہے اور اب اس کی اصلاح کا بیڑا بھی اٹھا رکھا ہے ،میرے ڈرامے میں لوگوں کو ایک اچھا موضوع ملے گا جس میں اصلاح کے پہلو کے ساتھ کامیڈی بھی شامل ہو گی۔ انہوں نے کہا ہے کہ مختلف شعبہ زندگی سے وابستہ نمایاں خدمات انجام دینے والی شخصیات کو حکومت کی جانب سے پرائیڈ آف پرفارمنس جیسے ایوارڈ دیئے جاتے ہیں مگر سٹیج کی صورتحال ایسی ہے کہ یہاں اس طرح کا کوئی ٹیلنٹ موجود نہیں اور خصوصاً خواتین اداکارائیں اس معاملے میں بالکل بانجھ ہیں ۔راشد محمودنے کہا کہ صرف ناچ گانے اور اچھل کود پر ایوارڈ نہیں ملتے اس کیلئے پرفارمنس کا مظاہرہ کرنا پڑتاہے ۔ سٹیج سے تعلق رکھنے والے بعض اداکاروں کو صدارتی ایوارڈ سمیت حسن کارکردگی ایوارڈ مل چکا ہے مگر کوئی بھی خاتون اداکارہ ابھی تک ایوارڈ کو حاصل کرنے میں کامیاب نہیں ہوئی جو میرے نزدیک ایک لمحہ فکریہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میں سٹیج ڈراموں میں بلا وجہ کی اچھل کود اور بیہودہ رقص کا سخت مخالف ہوں ،ڈرامے کے سکرپٹ کے مطابق اگر کسی جگہ رقص کی گنجائش ہے تو اسے کلاسیکل انداز میں پیش کیا جا سکتا ہے لیکن اگر تمام ڈرامہ ہی صرف گانوں پر مشتمل ہو تو پھر اداکاری بیچ میں سے نکل جاتی ہے ۔

مزید : کلچر