چیئرمین نیب نے شریف خاندان کی خواتین کے طلبی کے نوٹس منسوخ کر دیئے

چیئرمین نیب نے شریف خاندان کی خواتین کے طلبی کے نوٹس منسوخ کر دیئے
چیئرمین نیب نے شریف خاندان کی خواتین کے طلبی کے نوٹس منسوخ کر دیئے

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)چیئرمین نیب نے شریف خاندان کی خواتین کے طلبی کے نوٹس منسوخ کر دیئے اور مطلوب معلومات کیلئے سوالنامہ بھیجنے کا حکم دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس (ر)جاوید اقبال نے نیب لاہور بیوروکا دورہ کیا جہاں ڈائریکٹر جنرل لاہور کی جانب سے انہیں میگاکرپشن مقدمات بالخصوص شریف فیملی سے متعلقہ کیسز جن میں آمدن سے زائد اثاثہ جات اور مبینہ منی لانڈرنگ کے کیسز شامل ہیں ان پر جامع بریفنگ دی گئی۔

نیب اعلامیہ کے مطابق چیئرمین نیب کی جانب سے فیصلہ کیا گیا ہے کہ شریف فیملی کے تمام کیسز کی براہ راست نگرانی وہ خود کریں گے تاہم جسٹس (ر)جاوید اقبال نے نصرت شہباز،رابعہ عمران اور جویریہ علی کو نیب لاہور کی جانب سے بھجوائے گئے طلبی کے نوٹسز کینسل کرنے اور انہیں متعلقہ کیس کے حوالے سے نیب کو مطلوب معلومات کیلئے سوالنامہ ارسال کرنے کے احکامات صادر کئے۔

ضرور پڑھیں: اسد عمر کی چھٹی

نیب لاہو رکی جانب سے شریف فیملی کی خواتین کو آمدن سے زائد اثاثہ جات اور مبینہ منی لانڈرنگ کیس میں آج ہی سوالنامے ارسال کر دیئے جائیں گے،مذکورہ اقدامات اس بات کے غماز ہیں کہ نیب خواتین کی تقدیس، حرمت ،عزت اور چادر اور چاردیواری پر مکمل یقین رکھتا ہے ۔اس موقع پر چیئرمین نیب کا کہنا ہے کہ ”نیب احتساب سب کیلئے“کی پالیسی پر سختی سے گامزن ہے جبکہ نیب کی کسی سیاسی پارٹی سے وابستگی نہیں ،نیب ایک خودمختارادارہ ہے اور کسی بھی دباﺅ کو بالائے طاق رکھتے ہوئے قانون اور آئین پاکستان کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنے اقدامات سرانجام دیتا ہے،نیب کی نظر میں تمام ملزمان برابر ہیں تاہم تمام میگاکرپشن مقدمات کو میرٹ اور صرف میرٹ کی بنیاد پر جلدازجلد منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا،انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ نیب کی وابستگی صرف اور صرف ریاست پاکستان سے ہے۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور