وزارت خزانہ نے اگلے بجٹ کا سٹریٹجی پیپر تیار کرلیا

وزارت خزانہ نے اگلے بجٹ کا سٹریٹجی پیپر تیار کرلیا
وزارت خزانہ نے اگلے بجٹ کا سٹریٹجی پیپر تیار کرلیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزارت خزانہ نے اگلے مالی سال 2021-22 کےلئے بجٹ سٹریٹجی پیپر تیار کرلیا ۔

دستاویز کے مطابق آئندہ مالی سال کےلئے مجموعی ملکی پیداوار (جی ڈی پی) کا حجم 46 ہزار ارب سے بڑھا کر 52 ہزار ارب روپے مقرر کیا جائےگا۔دستاویز کے مطابق سال 2021-22 میں جی ڈی پی گروتھ چاراعشاریہ دو فیصد رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ،ٹیکس وصولیوں کا ہدف چھ ہزار ارب روپے رکھا جائے گا۔وزارت خزانہ کی دستاویز کے مطابق آئندہ مالی مہنگائی آٹھ فیصد رہنے کی توقع ہے حکومتی پالیسیوں کے تسلسل سے 2022-23 میں مہنگائی چھ اعشاریہ آٹھ فیصد اور 2023-24 میں مہنگائی کی شرح چھ اعشاریہ پانچ فیصد تک رہے گی۔دستاویز کے مطابق آئندہ مالی سال کےلے برآمدات کا ہدف 25اعشاریہ سات ارب ڈالر اور درآمدات 51 ارب ڈالر تک رہ سکتی ہیں۔

دستاویز کے مطابق آئندہ مالی سال بجٹ خسارہ جی ڈی پی کے چھ فیصد رہنے کا امکان ہے، مالی سال 22-2021 میں قرض جی ڈی پی کے تین اعشاریہ 84فیصد رہنے کا امکان ہے, وزارت خزانہ نے مالی سال 2021-22 کےلئے ٹیکس وصولیوں کا ہدف چھ ہزار روپے مقرر کیا ہے جبکہ اگلے بجٹ میں قرض اور سود کی ادائیگی کےلئے تین ہزار 100 ارب روپے مختص ہوں گے۔وزارت خزانہ نے اگلے مالی سال کے دوران ترقیاتی پروگرام کا حجم 630 ارب روپے رکھا ۔ 

مزید :

قومی -