زندگی کا مقصد یہ ہے کہ لوگ مثبت اور تعمیری سرگرمیوں میں مصروف ہو جائیں، قربانی کیلیے تیار رہیں اور ایک دوسرے سے تعاون کریں 

 زندگی کا مقصد یہ ہے کہ لوگ مثبت اور تعمیری سرگرمیوں میں مصروف ہو جائیں، ...
 زندگی کا مقصد یہ ہے کہ لوگ مثبت اور تعمیری سرگرمیوں میں مصروف ہو جائیں، قربانی کیلیے تیار رہیں اور ایک دوسرے سے تعاون کریں 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

مصنف:ڈاکٹر ڈیوڈ جوزف شیوارڈز
ترجمہ:ریاض محمود انجم
 قسط:60
ایک منیجر (منتظم) نے کہا: ”میری صلاحیتوں کا اس وقت اندازہ ہو جاتا ہے، جب میں تحریک اور ترغیب کے ذریعے اپنے ماتحتوں کو اپنے اہداف و مقاصد حاصل کرنے پر آمادہ کرتا ہوں، انہیں کسی بھی نقصان سے بچنے کے لیے ان میں ترغیب و حوصلہ پیدا کرتا ہوں، انہیں اپنی کارکردگی میں اضافے کے لیے تیار کرتا ہوں، ان کے دل میں جوش و جذبہ پیدا کرتا ہوں اور اپنے ادارے کے متعلق دوسروں لوگوں کے لیے تعریف و تحسین کے الفاظ ان کے منہ سے ادا کرواتا ہوں۔“
”ایک باپ نے کہا: اس وقت میری صلاحیتوں کا امتحان ہوتا ہے جب میں اپنی صلاحیت کے ذریعے اپنی شریک حیات سے محبت و پیار اپنے دل میں محسوس کرتا ہوں اور وہ بھی اپنے دل میں میرے لیے محبت و چاہت محسوس کرتی ہے۔ اس وقت میری صلاحیتوں کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے جب میں اپنی صلاحیت کے ذریعے اپنی بچوں کی دیکھ بھال اور نگہداشت کرتا ہوں تاکہ وہ مثبت اور تعمیری روئیے کے حامل شہری بن سکیں، مالی تحفظ حاصل کر سکیں، مشکل حالات میں ان کو مدد اور معاونت مہیا کر سکوں اور ایک خوش و خوشحال گھرانہ تشکیل دے سکوں۔“
آپ نے دیکھا کہ لوگوں کو یہ احساس ہو گیا زندگی میں ان کا مقصد یہ ہے کہ لوگ مثبت اور تعمیری سرگرمیوں میں مصروف ہو جائیں، قربانی دینے کے لیے تیار رہیں، ایک دوسرے سے تعاون کریں، بہترین سرمایہ کاری کریں، کامیابی اور فتح حاصل کریں۔ دوسرے الفاظ میں آپ اپنی صلاحیتوں کے ذریعے آپ دوسرے لوگوں کو مثبت اور تعمیری سرگرمیاں انجام دینے کے لیے آمادہ اور تیار کرتے ہیں۔
جو لوگ کامیابی حاصل کرنا چاہتے ہیں، یہی لوگ ہیں جو اپنی صلاحیتوں کے ذریعے دوسروں کو بھی کامیابی حاصل کرنے پر آمادہ اور تیار کرتے ہیں، انہیں تحریک و ترغیب مہیاکر تے ہیں، یہ لوگ ایسے انسانی ذرائع ہیں جن کے ذریعے اچھی، مثبت اور تعمیری سرگرمیاں وقوع پذیر ہوتی ہیں۔
مزید کامیابی کے لیے آپ قائدانہ صلاحیت پر مبنی ان سات موثر اصولوں پر عمل کیجئے:
کامیابی حاصل کرنے کے تمام بنیادی طرائق کی مانند ”قیادت“ بھی ایک ایسا سادہ اور سہل طریقہ ہے جو اس وقت کارگر ور مفید ثابت ہوتا ہے جب ہم مندرجہ ذیل سات اصول اپناتے ہیں: 
1:اپنے عملے کی مناسب اور بہتر دیکھ بھال اور نگہداشت کیجئے:
ایک منتظم (منیجر) کا ماتحت اور معاون عملہ اس وقت اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرتا ہے جب دوسرے منتظم (منیجر) کا ماتحت اور معاون عملہ، پہلے منیجر کے ماتحت اور معاون عملے کے مقابلے میں ناکافی سہولیات کے باعث خراب اور بری کارکردگی کا مظاہرہ کرتا ہے۔
فوج کے ایک افسر نے اس صورت حال کی یوں وضاحت کی: 
ہماری یونٹ کا سربراہ بہت ہی ذہین اور قابل تھا۔ اگر کوئی سپاہی کسی وقت کسی تکلیف میں مبتلا ہوتا تو وہ فوراً اس کا مسئلہ حل کرتا۔ وہ اپنے عملے کو ہمیشہ یہی یقین دلاتا کہ ان کے پاس کافی خوراک موجود ہے، ان کے پاس بہترین پناہ گاہ موجود ہے، اور ہر قسم کی ضرورت کا سازو سامان بھی موجود ہے۔ اسی طرح مشکل حالات میں ہم بھی اپنے کیپٹن کی ہر بات مانتے۔ یہی ایک طریقہ تھا جس کے ذریعے ہماری دیکھ بھال اور نگہداشت کرنے والے کپتان کو ہم اپنی طرف سے بہترین مدد او ر تعاون مہیا کرتے۔“
(جاری ہے)
نوٹ: یہ کتاب ”بُک ہوم“ نے شائع کی ہے (جملہ حقوق محفوط ہیں)ادارے کا مصنف کی آراء سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

مزید :

ادب وثقافت -