دہشتگردی کا مقابلہ ‘ جمہوری نظام کا تسلسل پاکستان کے بڑے مسائل ہیں ‘ ڈاکٹر طاہر امین

دہشتگردی کا مقابلہ ‘ جمہوری نظام کا تسلسل پاکستان کے بڑے مسائل ہیں ‘ ڈاکٹر ...

ملتان( سٹاف رپورٹر)بہاء الدین زکریایونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر طاہر امین نے کہا ہے کہ پاکستان کے بڑے مسائل دہشت گردی کا مقابلہ کرنا قومی مفادات کے تحت خارجہ پالیسی کی تشکیل ، جمہوری نظام کا تسلسل اور سماجی عدل کی اقدار کو قوم میں راسخ کرنا ہے ‘ وہ زکریا یونیورسٹی میں یوم آزادی کی تقریب سے خطاب کر رہے تھے‘زکریا یونیورسٹی میں صبح نو بجے پرچم کشائی اور ترانہ خوانی کی تقریب منعقد ہوئی جس میں وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر طاہر امین نے پرچم کشائی کی اور ترانہ خوانی کی قیادت(بقیہ نمبر1صفحہ12پر )

کی‘ اس موقع پر ملک کی سلامتی کے لئے دعا کی گئی ‘ڈین ، چیئرمین ، پرنسپلز ،افسروں و ملازمین اور ان کے بچوں کی بڑی تعداد نے بھی شرکت کی.اس موقع پر چیف لائبریرین سجاد لاڑ اور ان کے ساتھیوں نے تحریک آزادی سے متعلق کتابوں کی نمائش کا بھی اہتمام کیا.بعد ازاں جناح آڈیٹوریم میں 14 اگست کے حوالے سے جناح آڈیٹوریم میں منعقدہ بڑی تقریب سے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر طاہر امین ، روزنامہ پاکستان کے ریذیڈنٹ ایڈیٹرشوکت اشفاق‘ ڈاکٹر محمد اشرف خان اور بیرسٹر رباب مہدی ، طحہٰ قریشی نے بھی خطاب کیا.وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر طاہر امین نے اساتذہ طالب علموں اور میڈیا سے درخواست کی کہ ہمیں دنیا کے سامنے اسلام کو اس طرح پیش کرنا ہے کہ اسلام امن اور سلامتی کا دین ہے.اور دنیا میں بھی ترقی کا ذریعہ ہے اور آخرت میں بھی کامیابی ہے.یونیورسٹیاں قومی مفاد ات اور بین الاقوامی تناظرات کے تابع ، خارجہ پالیسی تشکیل دینے گہوارہ دانش یا تھنک ٹینک کا کردار اداد کرتی ہیں.ہمیں کشمیر کے عوام کا ساتھ دیتے ہوئے اپنے گردوپیش پر بھی نگاہ رکھنی ہے.اور پاکستان کی سا لمیت کو بھی سمجھنا ہے.ہمیں قانون کی حکمرانی جمہوری اداروں کے استحکام اور جدید شعور کے ساتھ استدلال اور باہمی رواداری معاشرے میں تشکیل کرنی ہے . اور اس بنیادی حقیقت کو بھی تسلیم کرنا ہے کہ پاکستان کی سلامتی کے لئے پاکستان نیوکلیئر پروگرام کے ساتھ ایک مضبوط فوج کا ہونا بہت ضروری ہے. انہوں نے کہا کہ زکریایونیورسٹی کے پاس سات سو سے زیادہ فیکلٹی ممبر ہیں جن میں اکثریت پی ایچ ڈی اساتذہ کی ہے .اگر یہ اس یونیورسٹی اور خطے پر قوم کی نیک نامی کے لیے ایک ٹیم بن کر کام کریں گے تو محمد علی جناحؒ اورڈاکٹر علامہ محمد اقبالؒ کا خواب شرمندہ تعبیر ہوگا.اور پاکستان کیلئے قربانیوں دینے والوں کی امنگیں بھر آئیں گی.طہ قریشی نے کہا کہ پاکستان میں مذہبی رواداری کو فروغ دینا ہے.اور ہر قسم کے تعصبات سے بالا تر ہوکر بین المذاہب اور بین المسالک کی ہم آہنگی کو پیدا کرنا ہے. صوبائی عصبیتوں کو بھی ختم کرنا ہے.مہمان خصوصی ریذیڈنٹ ایڈیٹر روزنا مہ پاکستان ‘سینئر صحافی شوکت اشفاق نے کہاکہ قیام پاکستان بہت بڑی قربانیوں کے ذریعہ حاصل ہوا ہے. تہذیبی تصادم کا علمی اور تحقیقی انداز میں جواب دینا ہے. انہوں نے کہاکہ ہم جن حالات سے گزر رہے ہیں‘ کیا سول لائزیشن کی جنگ ہے؟ ہم تو سولائزیشن کے امین ہیں ‘انہو ں نے کہاکہ آج کے پروگرام میں طلباو طالبات نے بھرپور حصہ لیا ہے جس سے یونیورسٹی کا ٹیلنٹ مزید نکھر کرسامنے آیا ہے .. بیرسٹر رباب مہدی نے کہاکہ سرائیکی خطہ ملک کی ترقی میں اہم کردار ادا کررہا ہے. ڈاکٹر محمد اشرف خان نے کہاکہ یونیورسٹی ماڈل سکول کے بچوں نے 14 اگست کے حوالے سے ٹیبلو ، ملی نغمے اور ڈرامہ میں بہت زبردست پرفارم کیا ہے .ان کی پرنسپل نصرت انجم مبارک باد کی مستحق ہیں.‘ وائس چانسلر یونیورسٹی ماڈل سکول کا بہت جلد دورہ کریں گے.تقریب کے آخر میں انٹر یونیورسٹی تقریری مقابلوں کے پوزیشن ہولڈرطلباو طالبات کو انعامات دئیے گئے ‘ وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر طاہر امین نے مہمان خصوصی ریذیڈنٹ ایڈیٹر روزنامہ پاکستان شوکت اشفاق کو شیلڈ دی ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر