بھارت کا یوم آزادی، کشمیریوں کا یوم سیاہ،مقبوضہ وادی میں مکمل ہڑتال،سری نگر میں قابض فورسزکی فائرنگ،2کشمیری شہید، ترنگا زمین پر گرگیا

بھارت کا یوم آزادی، کشمیریوں کا یوم سیاہ،مقبوضہ وادی میں مکمل ہڑتال،سری نگر ...
بھارت کا یوم آزادی، کشمیریوں کا یوم سیاہ،مقبوضہ وادی میں مکمل ہڑتال،سری نگر میں قابض فورسزکی فائرنگ،2کشمیری شہید، ترنگا زمین پر گرگیا

  

سری نگر (مانیٹرنگ ڈیسک) کنٹرول لائن کے دونوں طرف اور دنیا بھر میں مقیم کشمیری بھارتی یوم آزادی کوآج یوم سیاہ کے طور پر منارہے ہیں ۔ مقبوضہ وادی کے تقریباً سبھی علاقوں میں پاکستانی پرچم لہرائے گئے اور پاکستان کا قومی ترانہ بھی پڑھا گیا۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق یوم سیاہ کے موقع پر مقبوضہ وادی میں مکمل ہڑتال ہے ، ہڑتال کی کال کل جماعتی حریت کانفرنس کے چےئرمین سید علی گیلانی، میرواعظ عمرفاروق اور محمد یاسین ملک نے مشترکہ طور پردی تھی ۔تنازعہ کشمیر اور معصوم کشمیریوں پر بھارتی مظالم کو اجاگر کرنے کے لیے آج مقبوضہ علاقے اور مختلف ممالک کے دارالحکومتوں میں احتجاجی مظاہرے ہوں گے دیگر تقریبات بھی ہوں گی۔مظلوم کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے جماعت اسلامی آزاد جموں وکشمیر کے امیر عبدالرشیدترابی کی قیادت میں مظفر آباد سے چکوٹھی تک مارچ ہوگا۔ اس کے علاوہ لندن ، برسلز اور دنیا کے دیگر اہم شہروں میں کشمیریوں پر بھارتی مظالم کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے جائیں گے۔ دریں اثناءکل جماعتی حریت کانفرنس کے جنرل سیکرٹری شبیر احمد شاہ نے سرینگر سے جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ 15 اگست، بھارت کا یوم آزادی کشمیریوں کے لیے انتہائی بدقسمت اور تاریک دن ہے کیونکہ بھارت نے جموں وکشمیر پر جبری اور غیر قانونی قبضہ کررکھا ہے۔مقبوضہ وادی میں بھارتی فورسز کی بربریت بھی جاری ہے ،سری نگر میں فائرنگ سے دو کشمیری شہید ہوگئے،زخمی بھارتی فوجی بھی دم توڑ گیا، ریلی کے شرکاءپر بھارتی فورسز نے طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا جس سے آسیہ اندرابی سمیت درجنوں کشمیری زخمی بھی ہوگئے۔ بھارتی فورسز نے حریت رہنما سید علی گیلانی اور میر واعظ عمر فاروق کو گرفتار کرلیا ہے۔ادھر سری نگر میں ترنگا لہرانے کی بھارتیوں کی خواہش خواہش ہی رہ گئی،ترنگا لہراتے ہوئے زمین پر گرگیا۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں