کوئی میچ کھیلے بغیر سمتھ عالمی رینکنگ میں دوبارہ سرفہرست

کوئی میچ کھیلے بغیر سمتھ عالمی رینکنگ میں دوبارہ سرفہرست

  

لندن(آن لائن)آسٹریلین کرکٹر سٹیو سمتھ نے رواں سال مارچ میں پابندی کے بعد کوئی میچ نہیں کھیلا لیکن ٹیسٹ کرکٹ کے عالمی رینکنگ میں وہ ایک بار پھر پہلے نمبر پر آگئے ہیں۔ سٹیو سمتھ پر دورہ جنوبی افریقہ کے دوران بال ٹیمپرنگ میں ملوث ہونے کے بعد قومی و بین الاقوامی کرکٹ کھیلنے کی ایک سال کی پابندی عائد ہے۔ انڈین کپتان وراٹ کوہلی انگلینڈ کے خلاف پہلے ٹیسٹ میں 200 رنز بنا کر پہلے نمبر پر آگئے تھے لیکن دوسرے ٹیسٹ میں وہ صرف 40 رنز بنا سکے جس سے ان کی رینکنگ میں ایک درجہ تنزلی ہوگئی۔ آئی سی سی کی ٹیسٹ رینکنگ میں انگلینڈ کے جو روٹ تیسرے نمبر پر ہیں جبکہ جونی بیئرسٹو اتوار کو انڈیا کے خلاف 93 رنز کی اننگز کھیل کر نویں پوزیشن پر آگئے ہیں۔ دوسری جانب بولرز کی درجہ بندی میں انگلینڈ کے ہی جمی اینڈرسن کی پہلی پوزیشن برقرار ہے جبکہ جنوبی افریقہ کے زیادہ دوسرے اور انڈیا ۱ٍکے رویندر جدیجا تیسرے نمبر پر ہیں۔ انگلش آل راؤنڈرز لارڈز میں ہی عمدہ کارکردگی کی بدولت آل راؤنڈرز کی فہرست میں شامل ہوگئے ہیں اور ان کی ساتویں پوزیشن ہے۔ واضح رہے کہ آئی سی سی کی ٹیسٹ بولرز، بیٹسمینوں اور آل راؤنڈرز کی رینکنگ میں ٹاپ ٹیسٹ پوزیشن میں کوئی پاکستانی کرکٹر شامل نہیں ہے۔ ٹیسٹ ٹیموں کی رینکنگ میں انڈیا پہلے، جنوبی افریقہ دوسرے اور آسٹریلیا تیسرے نمبر پر ہے جبکہ اس درجہ بندی میں پاکستان کا نمبر ساتواں ہے۔آئی سی سی رینکنگ میں کھلاڑیوں کو صفر سے 1000 پوائنٹس پر رینک کیا جاتا ہے۔’کھلاڑی کے پوائنٹس اس کو دیے گئے اوسط پوائنٹس کی عکاسی کرتا ہے۔پوائنٹس بڑھتے ہیں اگر کھلاڑی کی پرفارمنس بہتر ہو اور کم ہوتے ہیں اگر پرفارمنس گرے۔

کوہلی نے سٹیو سمتھ کو اس وقت پیچھے چھوڑا جب انھوں نے 200 رنز سکور کیے۔ تاہم دوسرے ٹیسٹ میں دونوں اننگز میں کوہلی کْل 40 رنز سکور کر سکے۔ ان کی پرفارمنس اتنی زیادہ گری کہ ان کے پوائنٹس میں کمی ہوئی۔دوسری جانب سٹیو سمتھ مارچ میں پابندی کے بعد سے ان کی نہ تو پرفارمنس خراب ہوئی اور نہ ہی اچھی اس لیے ان کے پوائنٹس اتنے ہی رہے اور اسی لیے وہ پہلے نمبر پر ہی ہیں۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -