منی لانڈرنگ اور دہشتگردوں کی مالی معاونت کے شبہ میں 2ارب روپے ضبط

منی لانڈرنگ اور دہشتگردوں کی مالی معاونت کے شبہ میں 2ارب روپے ضبط

  

اسلام آباد(صباح نیوز) پاکستانی حکام نے منی لانڈرنگ اور دہشت گردوں کی مالی معاونت کے شبہ میں 2ارب روپے ضبط کر لیے ہیں۔وزارت داخلہ، وزارت خزانہ اور وزارت خارجہ کے حکام نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف)کی جائزہ ٹیم کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ پاکستان نے ایف اے ٹی ایف کے ایکشن پلان پر عمل درآمد شروع کردیا ہے، وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کے انسداد دہشت گردی ونگ کو 7مشکوک ٹرانزیکشنز کی رپورٹ موصول ہوئی، یہ تمام مشکوک ٹرانزیکشنز کالعدم تنظیموں سے متعلق تھیں۔اعلی حکام نے ایف اے ٹی ایف کی ٹیم کو بتایا کہ منی لانڈرنگ اور دہشت گردوں کو ترسیلات زر روکنے کیلئے1111 مقدمات درج کیے گئے، منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کے الزام میں ایک ہزار چار سو 66ملزموں کو گرفتار کیا گیا جبکہ ان الزامات کے تحت 542مقدموں میں الزامات ثابت ہونے پر مختلف سزائیں دی گئی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ایف اے ٹی ایف کی ٹیم نے جماعت الدعوہ ، فلاح انسانیت فاؤنڈیشن، لشکر طیبہ کے خلاف اقدامات کی تفصیلات کیساتھ ساتھ جیش محمد، داعش اور حقانی نیٹ ورک کو مالیاتی وسائل کی فراہمی کے خلاف اقدامات کی تفصیلی معلومات طلب کر لی ہیں۔

ایف اے ٹی ایف/بریفنگ

مزید :

صفحہ اول -