شیر علی گور چانی کا بھائی شراب شباب سمیت گرفتار

شیر علی گور چانی کا بھائی شراب شباب سمیت گرفتار

  

ملتان (وقائع نگار)پولیس تھانہ کینٹ میں سابق ڈپٹی سپیکر صوبائی اسمبلی شیرعلی گورچانی کے بھائی کوشراب اور لڑکی سمیت گرفتار کرنے کا انکشاف ہواہے جن کو ضلعی پولیس کے اہم انتظامی (بقیہ نمبر37صفحہ12پر )

افسر کی مداخلت پرچھوڑ دیاگیا ہے۔ باوثوق ذرائع سے معلوم ہواہے کہ تھانہ کینٹ کی پولیس نے سوموار اور منگل کی درمیانی شب کو شیرافگن گورچانی کو ایک لڑکی اور شراب کی بوتل سمیت حراست میں لیا جن کو تھانے منتقل کردیا گیا۔ دوران انوسٹی گیشن شیرافگن گورچانی نے یہ انکشاف کیا کہ میں سابق ڈپٹی سپیکر صوبائی اسمبلی شیرعلی گورچانی کابھائی ہوں‘ اسی اثناء میں ضلعی پولیس ملتان کے ایک اہم انتظامی عہدے پر تعینات افسر کی کال متعلقہ تھانے کے افسر کو آئی۔ ذرائع نے یہاں اس بات کادعویٰ کیا ہے کہ کال سننے کے بعد شیرافگن گورچانی، لڑکی کوپولیس نے خاموشی سے چھوڑ دیا اور وہ چلے گئے جس کے بعد اس معاملے کو دبانے کیلئے کوششیں تیزکردی گئیں۔ ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ قانون امیر اور غریب کیلئے برابر ہونا چاہئے‘ اس بارے میں جب ایس ایچ او تھانہ کینٹ اظہر سے پوچھا گیا تو انہوں نے کہا کہ میرے پاس ٹائم نہیں مجھے زیادہ نہیں پتہ اوپر سے حکم آیا تھا۔

شیرافگن گورچانی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -