ملک کسی سیاسی انتشار کا متحمل نہیں، مستحکم جمہوریت ہی مسائل کا حل

ملک کسی سیاسی انتشار کا متحمل نہیں، مستحکم جمہوریت ہی مسائل کا حل

  

کوئٹہ (بیورورپورٹ ) نگران وزیراعلیٰ بلوچستان علاؤ الدین مری نے کہا ہے ملک کسی بھی قسم کے سیاسی انتشار کا متحمل نہیں ہوسکتا ہمیں اپنے مسائل کا حل جمہوری طریقوں سے نکالنا ہوگا،دشمن الیکشن کو سبوتاژ کرنا چاہتا تھا لیکن عام انتخابات میں ووٹر ٹرن آؤٹ نے دشمن کے منہ پر طما نچہ مارا ہے، دنیاکی نظریں بلوچستان کی ساحلی پٹی اوریہاں کے وسائل پر مرکوز ہیں ہمیں ماضی کی غلطیوں سے سیکھتے ہوئے صوبے کو ترقی دینی ہوگی ،گزشتہ روز بلوچستان اسمبلی کے (بقیہ نمبر47صفحہ12پر )

سبزہ زار میںیو م آزادی کی مناسبت سے پر چم کشائی کی تقریب سے خطاب میں انکا مزید کہنا تھا ہم نے دہشتگردی کیخلاف جنگ میں بے پناہ قربانیاں دیں لیکن ہمارے حوصلے کبھی پست نہیں ہوئے نہ ہی اس ناسور کے خاتمے کے عز م میں کسی قسم کی کمی آئی ،آج کے دن شہداء کی کمی کو دل سے محسوس کر رہا ہوں،جنہوں نے قیام امن کیلئے جانوں کا نذانہ پیش کیا ،ملک میں نئے جمہوری دور کا آغاز ہورہا ہے اور انتقال اقتدار آخری مراحل میں ہے اس میں کوئی دو رائے نہیں کہ ملک و قوم کی ترقی اور استحکام جمہوریت کی مرہون منت ہے ملک میں جمہوریت اور جمہوری ادارے مضبوط ہورہے ہیں، ہمیں جمہوری رویوں سے ہی مسائل و مشکلات کا حل نکالنا ہو گا تاریخ گواہ ہے قوموں نے جمہوریت اور عوامی نظام حکومت سے ہی ترقی کی منازل طے کی ہیں، بلوچستان معدنی وسائل سے مالا مال ہو نے کے باوجود ماضی کی ناانصافیوں ،حکمرانوں کی ناقص پالیسیوں ،عدم توجہ کے باعث آج غربت اور جہالت کا شکار ہے ،ہمیں ان و سا ئل سے استفادہ حاصل کرکے بلوچستان کے مسائل کاحل تلاش کر کے صوبے کو پسماندگی سے نکالناہوگا،ہم گوادر پورٹ کو فعال ،سی پیک منصو بو ں کو عملی جامہ پہنانے اور غیر ملکی سرمایہ کاری کو ملک میں لانے کیلئے درپا امن کا قیام لازمی ہے،بلوچستان کو دہشتگردی کا سامنا ہے لیکن ہم نے دشمن کے اس چیلنج کو قبول کیا ہے اور اسے ہم جیت کر دکھائیں گے ۔کوئٹہ میں 25سے 30نجی ہسپتال ہیں لیکن حال ہی میں ہونیوالے دہشتگردی کے واقعات میں ان میں سے کوئی بھی آگے نہیں آیا نہ ہی کسی زخمی کے علاج کی ذمہ داری لی، نئی حکومت سے عوام کو بہت سے توقعات ہیں یقین ہے حزب اقتدار اور اختلاف ملکر صوبے کو آگے بڑھانے میں اپنا کردار ادا کریں گے ،تقریب میں مختلف سکولوں کے بچو ں نے ملی نغمے پیش کیے جبکہ 2منٹ کی خاموشی بھی اختیار کی گئی ۔ا س موقع پر کمانڈر سدرن کمانڈ لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ ، سپیکر بلو چستا ن اسمبلی راحیلہ حمید خان درانی ،نگران وزراء آغا عمر بنگلزئی ،نصر اللہ خلجی ،نو منتخب ارکان صوبائی اسمبلی میر جام کمال ، میر عبدالقدو س بزنجو ، سر د ا ر صالح محمد بھوتانی ،میر ظہور بلیدی ، عبدالرؤف رند، سردار عبدالرحمن کھیتران ،ثناء بلوچ، اصغر خان اچکزئی ،عبدالخا لق ہزارہ ، اختر حسین لانگو ،نصیب اللہ مری ،سردار بابر موسیٰ خیل،سلیم کھوسہ آئی جی ایف سی میجر جنرل ندیم احمد انجم، چیف سیکرٹری بلوچستان ڈاکٹر اختر نذیر، آئی جی پولیس محسن حسن بٹ سمیت لوگوں کی بڑی تعداد بھی مو جود تھی۔

علاؤ الدین مری

مزید :

ملتان صفحہ آخر -