سرکل آفیسر اینٹی کرپشن کی لوٹ مار، غیر قانونی اثاثے، نیب کا نوٹس

سرکل آفیسر اینٹی کرپشن کی لوٹ مار، غیر قانونی اثاثے، نیب کا نوٹس

  

بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر)سرکل آفیسر اینٹی کرپشن کی کروڑوں روپے کے غیرقانونی اثاثے اربوں روپے کے منصوبہ جات میں ملوث ملزمان کی’’جان بخشی‘‘پرنیب کانوٹس، ڈائریکٹر نیب ملتان نے تحقیقات کاحکم دیدیا ہے۔ تفصیل کے مطابق عرصہ دراز تک بہاولپوراینٹی کرپشن میں (بقیہ نمبر51صفحہ12پر )

تعینات رہنے والے سرکل آفیسراینٹی کرپشن راناکلیم احمدپرکروڑوں روپے کے پلاٹ کوٹھیاں زرعی جائیداد بینک بیلنس رکھنے پر نیب نے تحقیقات کاآغاز کردیاہے راناکلیم احمدنے رحمن گارڈن میں27 مرلے کاپلاٹ خرید کربنگلہ تعمیرکیاپلیکن ہوم میں پانچ مرلے کے پلاٹ پردومنزلہ کوٹھی تعمیرکی موضع قادربخش چنڑ، موضع ہوت والا، چک نمبر12 بی سی میں پلاٹ اور زرعی رقبے خریدے تھے اس کے دوران موصوف کے پاس سرکل آفیسربہاولپور، سرکل آفیسر ہیڈکوارٹر ، سرکل آفیسررحیم یارخان کابھی چارج تھا۔ انہوں نے اختیارات کاناجائز استعمال کرتے ہوئے وزیراعلی پنجاب کے حکم پرسیکرٹری پبلک ہیلتھ کی مدعیت میں پونے چار ارب روپے کے میگاسیوریج پراجیکٹ کے مقدمہ نمبر24/16 میں ایک پائی بھی ریکوری نہ کی ملزمان کوبے گناہ کردیاتھا۔ مقدمہ نمبر80/16 سیکرٹری جنگلات کی مدعیت میں درج ہونیوالے مقدمہ میں کنزرویٹر ڈی ایف اوز اور آرایف اوز سمیت70 افسران کیخلاف ساڑھے چارکروڑ روپے کی سرکاری لکڑی خوردبرد کے مقدمہ میں کارکردگی صفردکھائی صرف ایک اہلکار کوملزم ٹھہرایاگیا مقدمہ نمبر32/15 میں اربوں روپے کی84 مربع پرمشتمل جعلی الاٹمنٹ کے ملزمان کیخلاف کاروائی کرنے کی بجائے مک مکاکیاتھا اس کے علاوہ خودساختہ مدعیوں کے ذریعے ریڈکاروائیاں کرکے بعدمیں مک مکاکے ذریعے کروڑوں اکٹھے کیے تھے انکشاف ہونے پرنیب نے کاروائی شروع کردی ہے۔

نیب کا نوٹس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -