پاکستان کروڑوں دلوں کی دھڑکن ہے ، ناصر شاہ

پاکستان کروڑوں دلوں کی دھڑکن ہے ، ناصر شاہ

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر )آرٹس کونسل کراچی کے زیر اہتمام جشن آزادی فیسٹول کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سابق صوبائی وزیر سندھ و نومنتخب ممبر سندھ اسمبلی ناصر حسین شاہ نے کہا کہ پاکستان کروڑوں دلوں کی دھڑکن ہے اور ہم سب کی دعا ہے کہ پاکستان ہمیشہ قائم و دائم رہے اور ترقی کرتا رہے۔انہوں نے آزادی فیسٹول کی پر وقار تقریب کے انعقاد پر محمد احمد شاہ کو سراہا اور کہا کہ آرٹس کونسل کراچی کے زیر اہتمام جشن آزادی کی تقریبات منفرد ہوتی ہیں جو قابل ستائش اقدام ہے۔ نو منتخب ممبر صوبائی اسمبلی سید سردار علی شاہ نے کہا کہ یہ وطن عظیم قربانیوں کے بعد حاصل کیا گیا اور اس کے پیچھے بہت سے خواب اور وعدے ہیں جنہیں ہم سب نے مل کر پورا کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس ملک کو ہم سب کو مل کر ساتھ میں لے کر چلنا ہوگا اور ہم امید کرتے ہیں کہ ہمارے حکمران اور عوام دونوں ایک دوسرے کے شانہ بشانہ چل کر پاکستان کو کامیابیوں سے ہمکنار کریں گے۔ آرٹس کونسل کراچی ہر سال آرٹ اور کلچر کے ذریعہ ملک سے محبت کا اظہار کرتا ہے اور گزشتہ سال کی طرح اس برس بھی جشنِ آزادی کے موقع پر منفرد انداز میں اپنے ملک سے محبت کا اظہار کیاجا رہا ہے۔ صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ نے کہا کہ 14اگست کا دن ایک تاریخ ساز دن ہونے کے ساتھ ساتھ ہمارے لیے عید کے دن سے کم نہیں۔اس ملک کے 20کروڑ لوگوں کے لیے آزادی کا یہ دن سب سے بڑی عید کا دن ہے کہ جس دن اس عظیم مملکت پاکستان کا قیام عمل میں آیا۔ انہوں نے کہا کہ آرٹس کونسل کراچی 13اگست کی رات کو آزادی کی اسی خوشی کا رنگ مزید دوبالا کرنے کے لیے ہر سال اس رنگا رنگ تقریب کا انعقاد کرتا ہے تاکہ جشن آزادی کے اس پر مسرت موقع پر شہر بھر کے عوام ان خوشگوار لمحات میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے سکیں۔’’آزادی فیسٹول 2018ء‘‘ کی تقریبات کا آغاز رات 8 بجے کیا گیا۔ جب کہ رات 12بجیقومی ترانے کے ساتھ پرچم کشائی کی تقریب ہوئی اور ملک کی سالگرہ کا کیک کاٹا گیا۔ بعد ازاں آرٹس کونسل کی نو تعمیر شدہ عمارت کی چھت سے شہر کے سب سے بڑے آتش بازی کے دلفریب مظاہرے نے حاضرین محفل کو موہ لیا۔ اس موقع پر نو منتخب ممبر صوبائی اسمبلی قاسم سومرو سیکریٹری آرٹس کونسل کراچی پروفیسر اعجاز فاروقی، پروفیسر سحر انصاری، گورننگ باڈی کے اراکین اقبال لطیف، قدسیہ اکبر، بشیر سدوزئی، اسجد بخاری، کاشف گرامی، سید سعادت حسن جعفری، عبدالمجید ابدانی سمیت ملک بھر کی نامور سیاسی ،سماجی اور ادبی شخصیات موجود تھیں۔ ملک کے معروف نوجوان گلوکار عا صم اظہر نے کنسرٹ پرفارم کیا اور آزادی کے رنگ بکھیرے۔ عاصم اظہر نے مشہور زمانہ ملی نغمے ’’ہے جذبہ جنون‘‘ اور ’’ہے کوئی ہم جیسا‘‘ سمیت دیگر نغمے پیش کئے اور کنسرٹ کے اختتام پرحاضرینِ محفل کے ساتھ قومی ترانہ پڑھا۔ تقریب میں سینئر گلوکار محمد افراہیم نے بھی سروں سے سماں باندھا اور مشہور ملی نغمہ ’’زمیں کی گود رنگ سے امنگ سے بھری رہے‘‘ پیش کیا۔ سینئر آرٹسٹ غلام،عباس، تاج مستانی ، عمران جاوید اور طفیل سنجرانی سمیت آرٹس کونسل میوزک اکیڈمی کے باذوق نوجوان گلوکاروں نے قومی نغمے گنگنائے۔فیسٹول میں بچوں کے لیے فیس پینٹنگ کا بھی اہتمام کیا گیا تھا جبکہ بڑے پیمانے پر فوڈسٹالز بھی لگائے گئے تھے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -