سازش کے تحت مذہبی اور پختون قیادت کو پارلیمنٹ سے باہر نکالا گیا : مفتی کفایت اللہ

سازش کے تحت مذہبی اور پختون قیادت کو پارلیمنٹ سے باہر نکالا گیا : مفتی کفایت ...

  

صوابی( بیورورپورٹ) جے یو آئی صوبہ خیبر پختونخوا کے سینئر نائب امیر مولانا مفتی کفایت اللہ نے کہا ہے کہ اگر متحدہ اپوزیشن نے ملک بھر میں پچیس جولائی کو ہونے والے انتخابات میں مبینہ دھاندلی اور نتائج میں تبدیلی کے خلاف موثر تحریک نہ چلائی تو اس کے نتیجے میں مرکز اور صوبوں میں پی ٹی آئی کی حکومتیں مضبوط ہوں گی ۔ لہٰذا متحدہ اپوزیشن دھاندلی زدہ الیکشن کے خلاف بھر پور انداز میں عید الاضحی کے بعد احتجاجی تحریک کو موثر انداز میں چلائے ان خیالات کااظہار انہوں نے حجرہ صدیق خان میں صوبائی نائب و ضلعی امیر مولانا عطاء الحق درویش کی صدارت میں جے یو آئی ضلع صوابی کی مجلس شوری کے اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے کیا جس سے مولانا عطاء الحق درویش کے علاوہ ضلعی نائب امیر الحاج غفور خان جدون،مولانا عین الدین شاکر ،مولانا محمد ہارون حنفی، مولانا محمد امین دوست اور مفتی چاند بادشاہ وغیرہ نے بھی خطاب کیا۔ مولانا مفتی کفایت اللہ نے کہا کہ متحدہ اپوزیشن صوبہ خیبر پختونخوا وزیر اعلی کے حلف کے موقع پر بھر پور احتجاج کرینگے کیونکہ موجودہ وزیر اعلی عوام نے منتخب نہیں کیا ہے بلکہ ان کو مسلط کر دیا گیا ہے اور یوں وہ ایک جعلی وزیر اعلی ہے اس لئے ان کے خلاف احتجاج کیا جائیگا انہوں نے کہا کہ حالیہ الیکشن میں عوام کے رائے دہی کو چھینا گیا ہے عوام ان ساز شوں کوبے نقاب کرنے کے لئے میدان میں نکل آئے۔انہوں نے کہا کہ ایک سازش کے تحت مذہبی اور پختون قیادت کو پارلیمنٹ سے باہر نکال رکھا گیا۔انہوں نے کہا کہ حقیقی معنوں میں آزادی کے حصول کے لئے جدوجہد جاری رکھیں گے اللہ پاک کے علاوہ کسی کی غلامی قبول نہیں کرینگے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر ملک بھر میں الیکشن کمیشن آف پاکستان نے تمام حلقے کھولے تو اس کے نتیجے میں دوبارہ گنتی میں متحدہ اپوزیشن کے امیدواران کامیاب نکلیں گے۔ لیکن پی ٹی آئی اپنی ناکامی کو چھپانے کے لئے حلقے نہیں کھول رہے ہیں۔ پی ٹی آئی جعلی مینڈیٹ کے ذریعے اقتدار کے ایوانوں پر مسلط ہو رہی ہے لیکن بہت جلد جعلی حکمرانوں کا عوام بوریا بستر گول کرینگے۔ #

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -