کرکٹ کی 21برس بعد دوبارہ کا من ویلتھ گیمز میں واپسی

  کرکٹ کی 21برس بعد دوبارہ کا من ویلتھ گیمز میں واپسی

  

لندن (اے پی پی) کرکٹ کی 2028ء اولمپکس گیمز میں ممکنہ شمولیت سے قبل کرکٹ کو 21 برس بعد دوبارہ کامن ویلتھ گیمز کا حصہ بنا دیا گیا ہے، 2022ء میں برمنگھم، برطانیہ میں شیڈول گیمز میں صرف ویمنز ایونٹ کھیلا جائے گا، مینز ایونٹ کی شمولیت کے حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔ اس سے قبل آخری بار 1998ء میں کامن ویلتھ گیمز میں کرکٹ ایونٹ کا انعقاد ہوا تھا جب فائنل میں جنوبی افریقہ نے آسٹریلیا کو ہرا کر سونے کا تمغہ اپنے نام کیا تھا۔ کامن ویلتھ گیمز فاؤنڈیشن (سی جی ایف) کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق ویمنز کرکٹ کو 2022ء میں شیڈول کامن ویلتھ گیمز میں شامل کر لیا گیا ہے جو کہ ٹی ٹونٹی فارمیٹ کے تحت کھیلا جائے گا، ایونٹ کے تمام میچز ایجبیسٹن میں کھیلے جائیں گے۔ سی جی ایف کے صدر ڈام لوئس مارٹن نے کہا کہ آج ایک تاریخی دن ہے اور ہمیں کرکٹ کو دوبارہ گیمز کا حصہ بنانے پر بے حد خوشی محسوس ہو رہی ہے اور ہم اسے خوش آمدید کہتے ہیں، میں سمجھتا ہوں کہ کامن ویلتھ گیمز خواتین کھلاڑیوں کے پاس اپنی صلاحیتوں کو ثابت کرنے کا بہترین پلیٹ فارم ہو گا اور اس سے کرکٹ مزید مقبول ہو گا۔ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے بھی کرکٹ کی دوبارہ کامن ویلتھ گیمز میں شمولیت کو خوش آمدید کہا اور امید ظاہر کہ اس سے ویمنز کرکٹ کو مزید تقویت ملے گی۔ نیوزی لینڈ ویمن ٹیم کی کپتان ایمی سیٹرتھویٹ گیمز میں ویمنز کرکٹ کی شمولیت اہم سنگ میل ہے اور بلاشبہ یہ ویمن کرکٹ کیلئے ایک تاریخی موقع ہے

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -