دنیا کی کوئی طاقت کشمیر کو پاکستان سے الگ نہیں کرسکتا، مشتاق احمد خان   

  دنیا کی کوئی طاقت کشمیر کو پاکستان سے الگ نہیں کرسکتا، مشتاق احمد خان   

  

صوابی(بیورورپورٹ)امیر جماعت اسلامی صوبہ خیبر پختونخوا سینیٹر مشتاق احمد خان نے دو ٹوک الفاظ میں واضح کر دیا ہے کہ کشمیر ہمارے خون میں شامل ہیں اور کشمیر ہمارے ڈی این اے کا حصہ ہے دنیا کی کوئی طاقت کشمیر کو پاکستان سے الگ نہیں کر سکتاان خیالات کااظہار انہوں نے کرنل شیر خان چوک صوابی میں جماعت اسلامی یوتھ ونگ کے زیر اہتمام 72ویں یوم آزادی کے موقع پر آزادی نائٹ تقریب سے خطاب کر رہے تھے جس سے یوتھ ونگ کے مرکزی صدر عزیر احمد گوندل کے علاوہ ضلعی صدر حماد الدین، ضلعی امیر جماعت اسلامی میاں افتخار الدین باچا، نائب امیر سعید زادہ یوسفزئی، جنرل سیکرٹری سید الا سلام اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔ سینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا کہ کشمیر پاکستان کا حصہ تھا ہے اور پاکستان کا حصہ رہے گا۔ بھارت نہ صرف مقبوضہ و جموں کشمیر میں ہزاروں کی تعداد میں مسلمانوں کو شہید کر کے انتہائی ظلم و جبر کر رہا ہے اسی طرح وہ خود جنگی جرائم میں ملوث ہے کشمیر کی آزادی کے لئے وہاں کے مسلمان گذشتہ ستر سالوں سے جو جدوجہد کر رہے ہیں وہاں کے حریت پسندوں اور ان کی قیادت کو خراج تحسین پیش کر تے ہیں کشمیر کے مسلمانوں کا ٹینک اور توپ سمیت کوئی بھی مقابلہ نہیں کر سکتا ہے وہاں کے مسلمان آزادی کے لئے لا زوال قر بانیاں دے رہے ہیں اور اس کے نتیجے میں بھارتی فوج کو شکست پر مجبور کر دیا گیا ہے انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت نے 370 آرٹیکل کو ختم کر کے عالمی قوانین کی خلاف ورزی کی ہے اس وقت کشمیری عوام امتحان سے گزر رہے ہیں اب وقت کا تقاضا ہے کہ تمام پاکستانی کشمیری عوام کے شانہ بشانہ آزادی کی جنگ لڑنے کے لئے اُٹھ کھڑے ہو۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان کی طرح کشمیر کے مجاہدین اور مسلمان بھی جذبہ جہاد اورایمانی قوت سے بھارتی فوج کے مظالم کے خلاف لڑ رہے ہیں وہ ٹینک توپ اور گولوں سے ڈرنے والے نہیں جس طرح افغانستان کے مجاہدین اور مسلمانوں نے ایمانی قوت اور جذبہ شہادت سے روس کو ٹکڑے ٹکڑے کر دیا تھا اسی طرح کشمیر میں بھی بھارت کو شکست اور رسوائی کا سامنا کرنا پڑیگا اب افغان طالبان مذاکرات کے میز پر آچکے ہیں حالانکہ افغان مجاہدین نے کسی قسم کی فوجی قوت یا اور کوئی طاقت نہیں تھی بلکہ صرف ایمانی قوت تھی اور اسی جذبے سے کشمیر بھی آزاد کرایا جائیگا انہوں نے کہا کہ پاکستان کے موجودہ حکمران آزاد نہیں بلکہ غلام ہے تمام فیصلے ورلڈ بینک اور آئی ایم ایف کے اشاروں پر کر رہے ہیں اور اس کی واضح ثبوت یہ ہے کہ اسلام آباد میں بیٹھے آئی ایم ایف کے ریزڈنٹ ڈائریکٹر نے تین مہینوں کے لئے جو رپورٹ دی ہے اس میں کہا گیا ہے کہ پاکستان میں مدارس پر پابندی لگانے کے علاوہ اس کا نصاب تبدیل کیا جائے۔ناموس رسالت ایکٹ میں ترمیم کیا جائے اسی طرح پیٹرولیم مصنوعات، یوریا کھاد، بجلی اور گیس کی قیمتوں کا تعین بھی آئی ایم ایف کا سر براہ کر رہا ہے ایسے حالات میں پاکستانی حکمرانوں کے پاس کسی قسم کے اختیارات نہیں ہے جب حکومت کے پاس اختیارات نہ ہو تو کس طرح ہمارے حکمران آزاد ہو سکتے ہیں جو کہ شرم کی بات ہے۔ملک کے نظام کو چلانے کے لئے تمام چابیاں آئی ایم ایف کے حوالے کر دی گئی ہے۔ ہم ایسے غلام حکمران کسی صورت ماننے کو تیار نہیں قوم کو اس غلام حکمرانوں سے نجات دلائیں گے انہوں نے کہا کہ کشمیر کی آزادی تک لڑتے رہیں گے اقوام متحدہ کی قر ار دادوں کے مطابق کشمیریوں کو حق خود ارادیت دی جائے انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں کشمیر کے حوالے سے خوف اور بزدلی کا مظاہرہ کیا اس لئے روس، امریکہ اور متحدہ عرب امارات نے بھارتی فیصلے کی حمایت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ساڑھے تین کروڑ پختون مسلمانوں کو اگر حکومت نے راستہ دیا تو کشمیر کی آزادی میں اپنا بھر پور کر دار ادا کرینگے۔انہوں نے کہا کہ حکومت اقوام عالم میں سفارتی سطح پر مسئلہ کشمیر کو اُجاگر کریں پاکستان کے بائیس کروڑ عوام کشمیر ی عوام کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں اور جب پاکستان میں دیانتدار اور ایماندار قیادت اقتدار میں آجائے تو پاکستان ایشیاء کا ٹائیگر بنے گا موجودہ حکومت نے ملک کے عوام کو معاشی قتل عام، مایوسی، مہنگائی اور بد امنی کے سوا کچھ بھی نہیں دیا#

مزید :

پشاورصفحہ آخر -