4.5فیصد تک یورینیم کی افزودگی کا عمل شروع ہو چکا ہے، ایران  

  4.5فیصد تک یورینیم کی افزودگی کا عمل شروع ہو چکا ہے، ایران  

  

تہران (اے پی پی) ایران کے ایٹمی توانائی کے ادارے کے ترجمان نے کہا ہے کہ 4.5فیصد تک یورینیم کی افزودگی کا عمل شروع ہو گیا ہے۔ایران کے ایٹمی توانائی کے ادارے کے ترجمان بہروز کمال وندی نے کہا ہے کہ 3.7 فیصد سے زیادہ یورینیم کی افزودگی ایران کے ایٹمی بجلی گھروں کے ایندھن کے لئے ضروری ہے۔انہوں نے فردو میں پائیدار آئزوٹوپ کو علیحدہ کرنے والے مرکز کی تعمیر کی افتتاحی تقریب کے موقع پر یورینیم کی افزودگی کے تازہ ترین عمل کے بارے میں کہا کہ ایران نے افزودہ یورینیم کے ذخیرے کی سطح کو3 سو کلوگرام کی سطح سے عبور کر لیا ہے اور اس وقت ایران کے افزودہ یورینیم کا ذخیرہ 360 سے370 کلو گرام تک پہنچ گیا ہے۔

ترجمان نے کہا کہ ایران اپنا جو ہیوی واٹربرآمد کرتا ہے اس کی مقدار بہت زیادہ نہیں ہے لیکن چونکہ منڈیوں کی کثرت ہے اوریورپی اور غیر یورپی ممالک ایران کے ہیوی واٹر کے خریدار ہیں تو وہ اپنی برآمدات بڑھا بھی سکتا ہے۔

مزید :

علاقائی -