بارشوں نے نظام زندگی درہم برہم کر کے رکھ دیا، قاری محمد عثمان

بارشوں نے نظام زندگی درہم برہم کر کے رکھ دیا، قاری محمد عثمان

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) جمعیت علماء اسلام کے رہنما ء،جامعہ عثمانیہ شیر شاہ کے رئیس اور علماء ایکشن کمیٹی کراچی کے چیئرمین قاری محمد عثمان نے کہا کہ کراچی میں حالیہ شدید بارشوں نے نظام زندگی درہم برہم کر کے رکھ دیا ہے۔ عیدالاضحٰی کی نماز اور قربانی میں اہل کراچی کو  سخت دشواری کا سامنا کرنا پڑا۔کراچی انتظامیہ اور سندھ حکومت کے تمام دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے۔نماز عید اور قربانی کیلئے ایمرجنسی بنیادوں پر اقدامات نہ ہو نے کے برابر تھے۔بارشوں سے ہونے والے نقصانات کا ازالہ اور متاثرین کی بحالی کیلئے ایمرجنسی کی بنیادوں پر اقدامات کرنے ہوں گے۔کھالوں کے بیوپاریوں نے لوٹ مار کا بازار گرم کر رکھا ہے۔وہ عید اور باسی عید پر جماعتی احباب،دینی مدارس کے مہتممین اور رفاہی اداروں کے ذمہ داران سے گفتگو کررہے تھے جو ملاقات اور شکایات سے آگاہی کیلئے آئے ہوئے تھے۔ مہتممین مدارس نے قاری محمد عثمان کی گراں قدر خدمات پر شکریہ ادا کرتے ہوئے انہیں بتایا کہ کمشنر کراچی اور ڈپٹی کمشنرز سے چرم قربانی کے مسائل کے حل کے بعد اچانک بیوپاریوں نے ظلم کی انتہاء کرتے ہوئے اول ریٹ بالکل صفر تک پہنچا دیئے جبکہ اسکے بعد اپنے ٹھکیداروں سے معاملات اور فارمولا طے کرانے کے باوجود مال کی بھری گاڑیاں واپس کرادیں یا مال اتارنے کے بعد نمک نہ لگا کر مال سڑ کر تباہ ہو گیا ہے۔ قاری محمد عثمان نے کئی گوداموں کا دورہ کرنے کے بعد سڑے مال اور بیوپاریوں کے طرز عمل پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مدارس کے خلاف سازشیں تو عروج پر ہی ہیں اب کھالوں کی قیمتیں کم کرکے مدارس کا راستہ روکنے کی ناکام کوشش کی جارہی ہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -