کشمیر یوں کے ساتھ تھے ہیں اور رہیں گے: صدر عارف علوی، کشمیر پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہو سکتا: جنرل باجوہ

    کشمیر یوں کے ساتھ تھے ہیں اور رہیں گے: صدر عارف علوی، کشمیر پر کوئی ...

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)صدر مملکت عارف علوی نے کہا ہے کہ  ہماری امن پسندی کو بھارت کمزوری نہ سمجھے لہٰذا ہم پر جنگ مسلط کی گئی تو یہ دو ملکوں کی جنگ نہیں رہے گی بلکہ خطہ اور دنیا اس کے اثرات محسوس کرے گی۔کنونشن سینٹر اسلام آباد میں یومِ آزادی کی مرکزی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر عارف علوی نے کہا کہ آج ان عظیم شخصیات سے یوم تشکر کا دن بھی ہے جن کی بدولت آج ہم آزاد فضاء  میں سانس لے رہے ہیں، آج کا یوم آزادی یوم یکجہتی کشمیر بھی ہے، ہم ہمیشہ کشمیریوں کے ساتھ تھے، ساتھ ہیں اور انشاء  اللہ ہمیشہ ساتھ رہیں گے۔انہوں نے کہا کہ دنیا دیکھ رہی ہے قوم کشمیری بھائیوں کے ساتھ کھڑی ہے، ہم اس وقت تک ان کی سیاسی، اخلاقی اور سفارتی مدد کریں گے جب تک انہیں حق خودارادیت نہیں ملتا، ہم انہیں تنہا نہیں چھوڑیں گے، کشمیری ہمارے اور ہم ان کے ہیں، ان کا دکھ ہمارا دکھ ہے اور ان کی آنکھ سے بہنے والا آنسو ہمارے دل میں گرتا ہے۔صدر مملکت کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر پر بھارت کے حالیہ غیر قانونی اور یکطرفہ اقدام کے سلسلے میں پارلیمان نے مذمتی قرارداد بھی منظور کی ہے، ہم بھارت کی طرف سے مقبوضہ کشمیر کی متنازع حیثیت کی تبدیلی کو قبول نہیں کرتے، بھارت غیر قانونی اقدمات سے کشمیر کی متنازع حیثیت کو تبدیل نہیں کرسکتا، بھارت نے اپنے یکطرفہ اقدام سے نہ صرف اقوام متحدہ کی قراردادوں کی خلاف ورزی کی بلکہ شملہ معاہدے کو بھی ردی کی ٹوکری میں پھینک دیا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ بھارت نہ بھولے کہ کشمیر کے تین فریق ہیں، پاکستان، بھارت اور کشمیری عوام، ہم کشمیر کا پْرامن حل چاہتے ہیں، پاکستان سفارتی سطح پر اپنی جدو جہد جاری رکھے گا، ان دوست ممالک کے شکرگزار ہیں جو مشکل گھڑی میں کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں۔صدر مملکت کا کہنا تھاکہ پاکستان ایک امن پسند ملک ہے اور خطے میں بھی امن کا قیام چاہتا ہے، ہماری امن پسندی کو بھارت کمزوری نہ سمجھے، مسلمان جنگ کی تمنا نہیں کرتے لیکن جنگ مسلط کی جائے تو پیچھے نہیں ہٹتے، ہم پر جنگ مسلط کی گئی تو یہ دو ملکوں کی جنگ نہیں رہے گی بلکہ خطہ اور دنیا اس کے اثرات محسوس کرے گی، اب بھی بھارتی حکمرانوں سے کہتے ہیں ہوش کے ناخن لیں اور حالات کو اس نہج پر نہ لے جائیں جہاں سے واپسی ممکن نہ ہو۔صدر مملکت نے کہا کہ پاکستانیوں سے اپیل کرتا ہوں سوشل میڈیاکے ذریعے بھارت کی بھیانک شکل دنیا کے سامنے لائیں۔ان کا کہنا تھاکہ پاکستان ہر فورم پر کشمیریوں کا مقدمہ لڑے گا، پاکستان کبھی بھی کشمیریوں کی حمایت سے پیچھے نہیں ہٹے گا، اقلیتوں پر مظالم نے بھارت کا سیکیولر ریاست کا چہرہ مسخ کردیا، بھارت کی جنونیت کی اس کی جمہوریت کا بھانڈا پھوڑ دیا، بھارت ریاستی دہشت گردی اور جبر کا راستہ ترک کرے۔

صدر مملکت

راولپنڈی(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ پاکستان ہمیشہ کشمیریوں کے ساتھ کھڑا ہے اور کشمیر پر کبھی کوئی سمجھوتا نہیں ہوسکتا۔یوم آزادی اور کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے موقع پر پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ سے جاری بیان کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا  کہ کشمیر کی حقیقت تبدیل نہیں کی جاسکتی، 1947 میں کاغذ کے ایک غیرقانونی ٹکڑے سے کشمیر کی حقیقت نہیں بدلی جاسکی، نہ ہی کوئی اور کشمیر کی حقیقت اب یا مستقبل میں تبدیل کرسکتا ہے۔آرمی چیف نے کہا کہ پاکستان ہمیشہ کشمیریوں کے ساتھ کھڑا ہے، پاکستان بھارت کے غاصبانہ عزائم کے خلاف کشمیریوں کے ساتھ کھڑا ہے، کشمیر پر کبھی کوئی سمجھوتا نہیں ہوسکتا۔جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا تھا کہ ہم کسی بھی قیمت پر ظلم کے خلاف کھڑے رہیں گے، ہم کشمیر کاز کیلئے اپنی قومی ذمہ داریاں نبھانے کیلئے ہروقت تیار ہیں۔

جنرل باجوہ

مزید :

صفحہ اول -