ہائی کورٹ، ڈسٹرکٹ با رملتان میں پرچم کشائی کی تقریبات،ملکی سلامتی کیلئے دعائیں

ہائی کورٹ، ڈسٹرکٹ با رملتان میں پرچم کشائی کی تقریبات،ملکی سلامتی کیلئے ...

  

ملتان (خبر نگار خصو صی) یوم آزادی کے سلسلے میں ہائیکورٹ ملتان بینچ، سیشن و سول عدالتوں، بار ایسوسی ایشنز اور لاء افسران کے دفاتر میں پرچم کشائی کی تقریبات منعقد کی گئی۔ اس موقع پر ملکی سلامتی اور کشمیر کی آزادی کیلئے خصوصی دعائیں بھی کی گئیں۔اس ضمن میں گزشتہ روزصبح پونے 9بجے ہائیکورٹ ملتان بینچ میں پرچم کشائی کی تقریب منعقد ہوئی جس میں ایڈیشنل رجسٹرار ملتان بینچ محمد اکرام شیخ نے(بقیہ نمبر21صفحہ12پر)

پرچم کشائی کی اور دعا بھی کرائی گئی اور پولیس کے دستے کی جانب سے سلامی بھی پیش کی گئی جبکہ ہائیکورٹ بار ایسوسی میں بھی صدر بار ملک حیدر عثمان،جنرل سیکرٹری افضل بشیر،نائب صدر ساجد ایزدی نے دیگر وکلاء کے ہمراہ بار روم کی عمارت پر پرچم لہرایا۔ اور اس موقع پرملک وقوم کی سلامتی وترقی کے لئے دعاکرائی گئی ہائیکورٹ بار ایسوسی میں بھی صدر بار ملک حیدر عثماننے کہا کہ ہمیں اپنے فرائض کی انجام دہی کرتے ہوئے انصاف کی فراہمی کویقینی بناناہے جبکہ ملک کی تعمیرو ترقی میں ہم سب نے اپنااپنابھر پور حصہ ڈالنا ہے۔ڈسٹرکٹ کورٹ اور ڈسٹرکٹ بار میں پرچم کشائی کی تقریب منعقد ہوئی تقریب میں ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج بلال بیگ،صدر ڈسٹرکٹ بار محمد ناظم خان،جنرل سیکرٹری افضل بشیر انصاری،اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل غلام مصطفیٰ چوہان ودیگر وکلاء نے شرکت کی۔اس موقع پر پولیس کے چاک و چوبند دستے نے سلامی دی اور پرچم کشائی کے ساتھ ملک کیلئے خصوصی دعا کی گئی۔ڈسٹرکٹ بار میں سبز ہلالی پرچم کے ساتھ کشمیر کا جھنڈا بھی لہرا دیا گیاڈسٹرکٹ پراسیکوٹر ڈیپارٹمنٹ ملتان میں بھی جشن آزادی کی تقریب ہوئی جس میں پراسیکیوٹرز اور انکے ساتھ آئے ننھے بچوں نے ہوا میں غبارے چھوڑ کر وطن عزیز کے حق میں نعرے بھی لگائے۔تقریب میں،ڈسٹرکٹ بارکے عہدیداروں عدالتی عملہ اور ان کے بچوں نے بھی شرکت کی ہے۔بعدازاں ہائیکورٹ ملتان بینچ میں قائم ایڈووکیٹ جنرل پنجاب اوراٹارنی جنرل پاکستان کے دفاترمیں بھی پرچم کشائی کی تقریب منعقد کی گئی جس میں،لاء افسران اوروکلاء نے شرکت کی ہے جبکہ آخرمیں ملکی ترقی وسلامتی کیلئے دعاکرائی گئی ہے۔ہائیکورٹ ملتان بار میں پرچم کشائی کی تقریب منعقد کی گئی اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے صدر ہائیکورٹ بار ملتان ملک حیدر عثمان نے کہا کہ بار عہدیداران کا اقوام عالم سے کشمیر ایشو کو حل کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں اور وکلاء کشمیریوں کے ساتھ ہیں جبکہ بھارت غیر آئینی ترمیم کے ذریعے کشمیریوں کے حقوق غضب نہیں کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ سمیت عالمی تنظیمیں کشمیر ایشو کو حل کریں جبکہ وکلاء یوم سیاہ منائیں گے۔

تقریبات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -