کورونا وائرس کے دوران بھی دنیا کے امیر ترین افراد کی پارٹیاں جاری، ان میں وائرس سے بچاﺅ کے لیے کیا کیا جاتا ہے؟ تفصیلات جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں

کورونا وائرس کے دوران بھی دنیا کے امیر ترین افراد کی پارٹیاں جاری، ان میں ...
کورونا وائرس کے دوران بھی دنیا کے امیر ترین افراد کی پارٹیاں جاری، ان میں وائرس سے بچاﺅ کے لیے کیا کیا جاتا ہے؟ تفصیلات جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس بھی گویا غریبوں کے لیے ہی آیا ہے۔ امیر لوگوں کے اللے تللے تو اپنی جگہ جاری ہیں۔ اب اس حوالے سے ایسی خبر آ گئی ہے کہ کورونا وائرس اور لاک ڈاﺅن کے ستائے غریب لوگ حیران رہ جائیں گے۔ میل آن لائن کے مطابق کورونا وائرس کی اس وباءکے دنوں میں بھی سیلیکون ویلی کی اشرافیہ کی لگژری پارٹیاں بدستور جاری ہیں جن میں شریک لوگوں کے ’15منٹ ریپڈ کورونا ٹیسٹ‘ کیے جاتے ہیں۔ 

یہ لوگ پارٹیوں سے لطف اندوز ہونے کے بعد ایک شہر کے محفوظ مقام سے دوسرے شہرکے محفوظ مقام پر اپنے نجی طیاروں کے ذریعے اڑان بھر جاتے ہیں۔ ایک طرف اس اشرافیہ کے اللے تللوں پر کورونا وائرس رتی بھر اثرانداز نہیں ہو سکا اور دوسری طرف اسی امریکہ میں وباءکے باعث غریب لوگوں کا جینا دوبھر ہو چکا ہے۔ کروڑوں کی نوکریاں ختم ہو چکی ہیں اور ان گنت لوگوں کے کاروبار تباہ ہو چکے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سیلیکون ویلی کے ان ارب پتی افراد کی زندگی اسی طرح ہے جیسے کورونا وائرس سے پہلے تھی۔ جو لوگ پارٹیوں کا انعقاد کر رہے ہیں ان میں ’اوبر‘ کے شریک بانی ٹریویس کیلانک بھی شامل ہیں۔ فیس بک کے بانی مارک زکربرگ کو بھی گزشتہ ماہ ہوائی میں 12ہزار ڈالر کے الیکٹرک سرف بورڈ کی سواری کرتے دیکھا گیا ہے۔ ایمازون کے بانی جیف بیزوس نے حال ہی میں 1کروڑ ڈالر کا بیورلے ہلز میں عالیشان گھر خریدا ہے۔ یہ گھر ساڑھے 16کروڑ ڈالر مالیت کے اس کمپاﺅنڈ کے ساتھ ہی واقع ہے جو جیف بیزوس نے صرف 6ماہ پہلے خریدا تھا۔

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -