پانی کا طبّی استعمال اور فوائد

پانی کا طبّی استعمال اور فوائد

لندن (آئی اےن پی )جدید میڈیکل سائنس نے ثابت کیا ہے کہ اگر جسمِ انسانی میں پانی کی مقدار میں کمی واقع ہو جائے تو انسانی زندگی کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے،پانی کا زےادہ سے زےادہ استعمال مختلف بےمارےوں سے محفوظ رکھتا ہے ۔تحقےق کے مطابق پانی مزاج کے لحاظ سے سرد ترہے۔ یہ پیاس بجھاتا ہے اور بے ہوشی، تھکاوٹ، ہچکی، قے اور قبض کے امراض کو دور کرنے میں کام آتا ہے۔پانی پینے سے جسم سے آلودہ مادے خارج ہوتے ہیں۔ پانی خون کو گاڑھا ہونے سے بچاتا اور نظامِ دورانِ خون کی کار کردگی کو بحال اور رواں رکھنے میں انتہائی اہم کردار کا حامل ہے۔پانی جلدی جلد کو ملائم،نرم اور خوب صورت بناتا ہے۔کھانے کے دوران یخ ٹھنڈا پانی سے پر ہیز کرنا چاہیے کیونکہ برف ٹھنڈا پانی معدے کی قوتِ ہاضمہ کو کمزور کرتا ہے۔دائمی قبض کے مریضوں کو نہار منہ پانی پینا چاہیے اور کھا نے سے پہلے،درمیان اور بعد میں بھی پانی کا استعمال کرنا چاہیے۔ عام طور پر قبض کی بیماری انتڑیوں میں خشکی بڑھ جانے سے ہو تی ہے جب کہ پانی سرد تر ہونے کی وجہ سے انتڑیوں کی خشکی ختم کرتا ہے۔

یہ بھی دھیان رہے کہ پانی جسمانی ضرورت اور گنجائش کے مطابق ہی پینا چاہیے ورنہ پانی کی زیادتی نفخ،اپھارہ اور بھاری پن پیدا کرنے کا باعث بن سکتی ہے۔ صاف اور شفاف پانی ہمارے جسم سے مضر اور آلودہ مادوں کو خارج کرکے ہماری تندرستی میں مدد گار ہوتا ہے۔

مزید : عالمی منظر