پی پی 168 ضمنی انتخاب ،لیگی امیدوار کی درخواست پر ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا حکم جاری

پی پی 168 ضمنی انتخاب ،لیگی امیدوار کی درخواست پر ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا حکم ...
پی پی 168 ضمنی انتخاب ،لیگی امیدوار کی درخواست پر ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا حکم جاری

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)لاہور کے حلقہ پی پی 168 کے ریٹرننگ افسر نے مسلم لیگ (ن) کے شکست خوردہ امیدوار رانا خالد محمود قادری  کی درخواست پر ضمنی انتخاب کے ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا حکم دے دیا۔

نجی ٹی وی کے مطابق مسلم لیگ ن کے ٹکٹ ہولڈر رانا خالد قادری نے  ریٹرننگ افسر کو دی گئی درخواست میں کہا تھا کہ حلقے میں ضمنی انتخاب کے دوران مسترد ہونے والے ووٹوں کی تعداد زیادہ ہے لہذا دوبارہ ووٹوں کی گنتی کا حکم دیا جائے ۔درخواست پر ریٹرننگ افسر نے ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا حکم دیتے ہوئے حلقے  کے تمام امیدواروں کو طلب کر لیا ہے،ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا عمل  گورنمنٹ کرسچین ہائی سکول میں ہو گا اور 33 پولنگ سٹیشنز کے ووٹوں کی دوبارہ گنتی کی جائے گی جس میں ایک دن لگنے کا امکان ہے۔ضمنی انتخاب کے رزلٹ ٹرانسمیشن سسٹم (آر ٹی ایس)سے موصول ہونے والے نتیجے کے مطابق کاسٹ کیے گئے 36 ہزار 337 ووٹوں میں سے 684 ووٹ مسترد ہوئے تھے۔ریٹرننگ افسر کا کہنا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی) کے امیدوار اسد علی کھوکھر نے 687 ووٹوں کے فرق سے کامیابی حاصل کی تھی۔الیکشن ایکٹ 2017 کے سیکشن 95 (5) کے مطابق اگر امیدواروں کے درمیان فتح کا مارجن 5 فیصد سے کم ہو اور امیدوار تحریری طور پر ووٹوں کی دوبارہ گنتی کی درخواست دے تو ریٹرننگ افسران کو ایک یا زائد پولنگ سٹیشنز میں بیلٹ پیپرز کی دوبارہ گنتی کرانی ہوتی ہے۔غیر سرکاری غیر حتمی نتیجے کے مطابق پی ٹی آئی کے اسد علی کھوکھر ضمنی انتخاب میں 687 ووٹوں کے فرق سے کامیاب ہوئے تھے، انہوں نے 17 ہزار 579 ووٹ حاصل کیے جبکہ ان کے مدمقابل رانا خالد نے 16 ہزار 893 ووٹ لیے تھے۔یہ نشست اکتوبر میں ہونے والے ضمنی انتخابات میں خواجہ سعد رفیق کے حلقہ این اے 131 سے رکن قومی اسمبلی منتخب ہونے کے بعد خالی ہوئی تھی۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -