الخدمت گروپ اور پروفیشنل گروپ میں آج کانٹے دار مقابلہ ، رئیلٹرز گروپ بھی میدان میں

الخدمت گروپ اور پروفیشنل گروپ میں آج کانٹے دار مقابلہ ، رئیلٹرز گروپ بھی ...

  

لاہور(ڈویلپمنٹ سیل)ڈی ایچ اے لاہور میں آج الخدمت گروپ اور پروفیشنل گروپ میں کانٹے دار مقابلہ ،رئیلٹرز گروپ بھی میدان میں،528ووٹر نئی قیادت کا فیصلہ کریں گے،پولنگ کی جگہ تبدیل آربلاک کی بجائے ایس بلاک کے سکول میں ہو گی ،پولنگ صبح 9بجے شروع ہو گی سہ پہر3بجے تک جاری رہے گی،3پولنگ بوتھ بنائے جائیں گے،ہر گروپ کے دو پولنگ ایجنٹ ذمہ داری ادا کریں گے،سخت ترین فول پروف سکیورٹی انتظامات کر لیے گئے،نعرے بازی جلسے جلوس ،اسلحہ پر مقدمہ بنے گا،موبائل فون پر پابندی ہو گی،ڈی ایچ اے کے رجسٹرڈ ڈیلرز ڈی ایچ اے کا کارڈ دکھا کر ووٹ ڈال سکیں گے،کارڈ نہ ہونے کی صورت میں ڈی ایچ اے کی فیس کا اصلی چالان اور شناختی کارڈ کار آمد ہو گا،الخدمت گروپ،پروفیشنل گروپ،ڈی ایچ اے رئیلٹرز ووٹ کے لیے انتخابی کیمپ لگا سکیں گے،ہنگامی حالات میں پولیس سے مدد لے سکتے ہیں چےئرمین الیکشن کمیٹی راشد خان کی روزنامہ پاکستان سے گفتگو،انہوں نے بتایا کہRبلاک ڈیفنس بوائز کالج میں اگر ووٹنگ ہوتی تو ٹریفک کے مسائل پیدا ہو سکتے تھے اس لیے چیف سکیورٹی ڈی ایچ اے کے ساتھ تینوں صدارتی امیدواران نے باہمی مشاورت سے Rبلاک کے با لمقابل Sبلاک سینئر سکول میں پولنگ کرانے کا فیصلہ کیا ہے،ان کا کہنا ہے کہ آج ہونے والے انتخابات میں 27امیدواران حصہ لے رہے ہیں9نشستوں پر مقابلہ ہے ،پولنگ صبح 9بجے شروع ہو گی اور3بجے ختم ہو گی،جو ووٹر پولنگ بوتھ میں آ جائیں گے وہ3بجے کے بعد بھی ووٹ ڈال سکیں گے،پولنگ ختم ہونے کے فوری بعد امیدواران اور ایجنٹ کی موجودگی میں گنتی شروع ہو جائے گی گنتی مکمل ہونے کے ساتھ ہی نتائج کا اعلان کر دیا جائے گا،راشد خان نے کہا کہ اگر کسی امیدوار کے ووٹ برابر ہو گئے تو موقع پر ٹاس ہو گا،الیکشن کمیشن کا فیصلہ حتمی ہو گا،ووٹر اور امیدواران کا تعلق ایک برادری سے ہے الیکشن کا کامیابی کے ساتھ کرانا ہر ایک کی ذمہ داری ہے ،ایک دوسرے کا احترام اور تعاون ضروری ہے الیکشن کے بعد بھی سب نے ایک جگہ رہنا ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -