این آر او مانگنے والوں کے نام پارلیمینٹ میں بتاؤں گا،مراد سعید

این آر او مانگنے والوں کے نام پارلیمینٹ میں بتاؤں گا،مراد سعید

  

راولپنڈی( سٹاف رپورٹر) وفاقی وزیر برائے پوسٹل سروسز و مواصلات مراد سعید نے کہاہے این آر او مانگنے والوں کے نام پارلیمینٹ میں بتاوں گا،مجھ سے اس لیے این آر او مانگتے ہیں کہ میں مواصلات کا وزیر ہوں پچھلی حکومت نے پل اور سڑک بناتے ہوے بے دھڑک پیسے کمائے اب اگر میں محکمہ کا فرانزک آڈٹ کراؤں تو پھنس جائیں گے اسی لیے مجھ سے این آر او مانگ رہے ہیں 13 ہزار پوسٹ آفس کو جدید تقاضوں پر بناکر ورکرز کی تربیت کی جائے گی پوسٹل سروسز میں ای کامرس، موبائل منی آرڈر،ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم سمیت دیگر ٹیکنالوجی متعارف کروا رہے ہیں نیشنل بینک سے بات چیت مکمل ہوچکی ہے دو ہفتے بعد ایم او یو سائن کرلیں گے جس کے تحت بیرون ممالک سے آنے والے پیسے کو پوسٹل آفسز سے جوڑ کر ہنڈی، حوالہ کی حوصلہ شکنی ہوگی ایک سال میں خسارہ منافع میں تبدیل کرونگا ،3 ماہ میں لاجسٹک نظام لاکر ادارے کو تبدیل کیا جائے گاپاکستان پوسٹ کی نجکاری نہیں ہوگی اس ادارے کی ذمہ داریاں چیلنج سمجھ کر قبول کی ہیں کیونکہ 40ہزار ملازمین اور12 ہزار ڈاکخانے جن کی رسائی 80ہزار دیہات تک ہواتنابڑا نیٹ ورک کسی اور کے پاس نہیں اس سب کے باوجودسالانہ ساڑھے ارب روپے خسارے کی وجہ سیاسی اثرو رسوخ تھا جس نے ادارے کو تباہ کرڈالا، ان خیالات کا اظہار مراد سعید نے راولپنڈی جی پی او کے دورے کے دوران ڈاک عملے سے خطاب کے دوران کیا۔

مراد سعید

مزید :

صفحہ اول -