وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی افغانستان اور چین کے وزراءخارجہ سے غیر رسمی ملاقات،افغان مفاہمتی عمل پر تبادلہ خیال

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی افغانستان اور چین کے وزراءخارجہ سے غیر رسمی ...
وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی افغانستان اور چین کے وزراءخارجہ سے غیر رسمی ملاقات،افغان مفاہمتی عمل پر تبادلہ خیال

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) افغان امن عمل کے حوالے سے سہ فریقی مذاکرات میں شرکت کیلئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی سربراہی میں وفد کابل پہنچ گیا،کابل پہنچنے پر افغان حکام نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا استقبال کیا۔اس موقع پر پاکستان،افغانستان اورچین کے وزراخارجہ کی غیررسمی ملاقات ہوئی جس میں علاقائی سلامتی،امن واستحکام اورافغان مفاہمتی عمل پرتبادلہ خیال ہوا،پاکستان اور افغانستان نے سہ فریقی مذاکرات منعقد کرانے پر چینی اقدام کو سراہا۔

علاوہ ازیںپاکستان، چین اور افغانستان کے وزرائے خارجہ کی سطح پرباقاعدہ مذاکرات آج ہوں گے جس میں پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، چینی وزیر خارجہ وانگ ژی اور افغان وزیر خارجہ صلاح الدین ربانی اپنے اپنے وفود کی قیادت کریں گے۔

ذرائع کے مطابق سہ فریقی مذاکرات کا مقصد افغانستان میں دیرپا امن کا مستقل حل تلاش کرنا ہے، کابل میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی افغانستان کے صدر ڈاکٹر اشرف غنی سے بھی ملاقات کریں گے۔ وزرائے خارجہ کی سطح پر سہ فریقی مذاکرات کا یہ دوسرا دور ہوگا۔ تینوں ممالک کا پہلا مذاکراتی دور گزشتہ سال بیجنگ میں ہوا تھا۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے چین کی جانب سے سہ ملکی مذاکرات کا آغاز خوش آئند ہے، چین اور پاکستان دونوں افغانستان کے ہمسایہ ممالک ہیں، دونوں ممالک افغانستان کی بہتری چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا افغانستان میں امن، استحکام، ترقی اور خوشحالی چاہتے ہیں، دوستی، خوشحالی اور امن کا پیغام لیکر افغانستان جا رہے ہیں، چاہتے ہیں خطہ ترقی کی دوڑ میں آگے بڑھے، اس کیلئے امن ضروری ہے۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -بین الاقوامی -علاقائی -اسلام آباد -