دہری شہریت والے ملازمین ریاست پاکستان کے مفادکیلئے خطرہ ہیں،سپریم کورٹ کا غیر ملکی شہریت لینے والے ملازمین کیخلاف کارروائی کا حکم

دہری شہریت والے ملازمین ریاست پاکستان کے مفادکیلئے خطرہ ہیں،سپریم کورٹ کا ...
دہری شہریت والے ملازمین ریاست پاکستان کے مفادکیلئے خطرہ ہیں،سپریم کورٹ کا غیر ملکی شہریت لینے والے ملازمین کیخلاف کارروائی کا حکم

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے دہری شہریت والے سرکاری ملازمین ودیگرپاکستانیوں سے متعلق فیصلہ سنادیاگیا۔ عدالت نے دوران ملازمت غیرملکی شہریت لینے والے ملازمین کیخلاف کارروائی کاحکم دیدیا۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں بنچ نے دہری شہریت والے سرکاری ملازمین و دیگر پاکستانیوں سے متعلق فیصلہ سنا دیا ،عدالت نے دوران ملازمت غیرملکی شہریت لینے والے ملازمین کیخلاف کارروائی کاحکم دیدیا۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں دورکنی بنچ نے فیصلہ سنایا،فیصلے میں کہا گیا ہے کہ غیرملکی شہریت وفاقی وصوبائی حکومتوں کے ملازمین کی بدنیتی کوظاہرکرتی ہے متعلقہ حکومتیں ایسے ملازمین کوڈیڈلائن دیں اور اگروہ دہری شہریت نہ چھوڑیں تو ان کیخلاف کارروائی کریں،چیف جسٹس پاکستان نے کہا ہے کہ دہری شہریت والے ملازمین ریاست پاکستان کے مفادکیلئے خطرہ ہیں۔

فیصلے میں کہا گیا ہے کہ غیرملکی شہریت والوں کوپاکستان میں عہدے دینے پرپابندی ہونی چاہئے، دہری شہریت والوں کوعہدے دینے پرپابندی سے متعلق پارلیمنٹ واضح فیصلہ کرے۔

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -لاہور -اہم خبریں -