شیخ رشید کے ریلوے کو منافع بخش ادارہ بنادیئے جانے کے دعوے کی حقیقت سامنے آگئی

شیخ رشید کے ریلوے کو منافع بخش ادارہ بنادیئے جانے کے دعوے کی حقیقت سامنے ...
شیخ رشید کے ریلوے کو منافع بخش ادارہ بنادیئے جانے کے دعوے کی حقیقت سامنے آگئی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر شیخ رشید احمد ہمیشہ  ریلوے کو منافع بخش ادارہ بنانے کے دعوے کرتے ہیں لیکن دراصل پاکستان ریلوے خسارے میں ہے اور اس ضمن میں تحریری طورپر قومی اسمبلی کو آگاہ کردیا گیا۔ 

جیونیوز کے مطابق قومی اسمبلی میں پاکستان ریلوے کے خسارے کے اعداد و شمار سے متعلق وزارت کی جانب سے تحریری جواب جمع کرایا گیا ہے جس کے مطابق شیخ رشید کے دور میں بھی ریلوے کا خسارہ کم نہیں ہوا۔ وزارت ریلوے کے تحریری جواب میں بتایا گیا ہےکہ جولائی سے اکتوبر تک ریلوے کو 9 ارب 81 کروڑ روپے خسارےکا سامنا رہا جب کہ گزشتہ سال ریلوے کا خسارہ 36 ارب 62 کروڑ روپے تھا۔

دوسری طرف قومی اسمبلی میں سندھ میں ریلوے کی اراضی پر قبضے کے اعداد شمار بھی بتائے گئے جس کے مطابق سندھ میں ریلوے کی ایک ہزار 151 ایکڑ اراضی پر قبضہ ہے، حیدرآباد میں 53 ایکڑ، میرپور خاص میں 5.8 ایکڑ اراضی پر قبضہ ہے۔وزارت ریلوے کے تحریری جواب میں مزید بتایا گیا کہ حیدرآباد اور میرپور خاص میں 5 سال میں 39 ایکڑ سے زائد اراضی واگزار کروائی گئی۔

مزید :

قومی -