سندھ بھر میں 6 روز بعد سی این جی سٹیشنز کھل گئے،گاڑیوں کی لمبی قطاریں، سڑکوں پر ٹریفک کی روانی بھی متاثر

سندھ بھر میں 6 روز بعد سی این جی سٹیشنز کھل گئے،گاڑیوں کی لمبی قطاریں، سڑکوں ...
سندھ بھر میں 6 روز بعد سی این جی سٹیشنز کھل گئے،گاڑیوں کی لمبی قطاریں، سڑکوں پر ٹریفک کی روانی بھی متاثر

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)سندھ بھر میں 6 روز سے بند سی این جی سٹیشنز کھل گئے,وزیر پیٹرولیم غلام سرور کی جانب سے 8 بجے شب سے سندھ بھر میں سی این جی سیکٹر کو گیس کی سپلائی بحال کرنے کے اعلان کے بعد کراچی سمیت صوبے بھر میں سی این جی سٹیشنز کھل گئے ہیں,گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کراچی میں کھلنے والے سی این جی سٹیشنز کا دورہ کیا اور گیس بحالی کا جائزہ لیا، گورنر سندھ نے سی این جی سٹیشنز پر گیس بھروانے کے لیے آنے والے افراد سے ملاقاتیں بھی کیں۔سی این جی کھلنے کے اعلان سے قبل ہی شہر بھر کے سٹیشنز پر گیس بھروانے کے لیے گاڑیوں کی طویل قطاریں لگ گئیں جس میں رکشا کی تعداد زیادہ ہے، گیس سٹیشنز پر گاڑیوں کے رش کے باعث قطاریں سڑکوں تک پہنچ رہی ہیں جس کے باعث جگہ جگہ ٹریفک کی روانی متاثر ہورہی ہے۔

قبل ازیں گورنر ہاس کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر پیٹرولیم و قدرتی وسائل غلام سرور نے کہا تھا کہ سندھ میں گیس کا بحران پیدا نہیں ہوا بلکہ پیدا کیا گیا، گیس بحران میں ملوث عناصر کی نشاندہی کے لیے وزیراعظم کی ہدایت پر تحقیقات جاری ہے، گیس بحران کی وجہ سے نہ صرف سی این جی اور عوام کو نقصان ہوا بلکہ برآمدی نقصان بھی ہوا۔وفاقی وزیر نے کہا کہ حکومت کی گیس کے حوالے سے اولین ترجیح گھریلو صارفین ہیں تاہم سی این جی سکیٹر کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دیں گے، سندھ میں سی این جی سیکٹر کی گیس آج رات 8 بجے بحال کردی جائے گی جب کہ سندھ کی دوفیلڈز کی کم ہونے والی پیداوار ایک دو دن میں بحال ہوجائے گی۔وزیر پیٹرولیم نے کہا کہ سی این جی سٹیشنز کی ہفتے میں 3 دن لوڈ شیڈنگ ضرور ہوگی اور کیپٹیو پاور پلانٹس کی حامل صنعتوں کو موسم سرما کے 3 ماہ میں 50 فیصد گیس سپلائی کی جائے گی، کپیٹیو انڈسٹری کو کل سے 50 فیصد گیس فراہم کریں گے جب کہ کیپٹیوپاورصنعتی یونٹس اپنی بجلی فروخت نہیں کرسکیں گے۔غلام سرور کا مزید کہنا تھا کہ 6،6 بار حکومتوں میں آنے والوں نے کراچی کوتباہ کردیا پی ٹی آئی کی حکومت سندھ کے مسائل کو دیگر صوبوں کی طرح یکساں انداز میں حل کرے گی.

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -