ہانگ کانگ،حکومتی مالیاتی پالیسیوں سے 4 لاکھ افرادغربت سے نکل آئے

ہانگ کانگ،حکومتی مالیاتی پالیسیوں سے 4 لاکھ افرادغربت سے نکل آئے

  



ہانگ کانگ(آ ئی این پی/شِنہوا)ہانگ کانگ حکومت کی طرف سے جاری کی گئی  غربت کی صورتحال سے متعلق رپورٹ 2018  کے مطابق  چینی ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقہ (ایچ کے ایس اے آر)  حکومت کی مسلسل مالیاتی پالیسیوں  نے  موثر طور پر 3 لاکھ 82 ہزار200 افراد کو غربت سے نکال دیا۔2013 میں پہلی سرکاری غربت لائن کی اشاعت کے بعد  سے یہ ہانگ کا نگ  غربت کی  تجزیاتی صورتحال  کی تازہ ساتویں سالانہ ر پورٹ ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 2018میں ایچ کے ایس اے آر کی مسلسل مالیاتی پالیسیوں پر عمل در آمد کے بعد ہانگ کانگ کی غریب آبادی 1024300  اور غربت کی شرح14.9  فیصدتھی جبکہ پالیسیوں پر عمل در آمد سے پہلے غریب آبادی 1406500 اور غربت کی شرح 20.4 فیصد تھی جو پالیسیوں کے موثر ہونے کی عکاس ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے  2018 میں غریب آبادی اور غربت کی شرح کے اعداد وشمار 2017 سے تھوڑے سے  زیادہ تھے اس کی بنیادی وجہ آبادی کی عمر میں تیزی سے ہونے والا اضافہ ہے جو معاشی اور روزگار کے سازگار حالات اور ایچ کے ایس آر حکومت کی غربت کے خاتمے میں مضبوط کوششوں سے پیدا ہونے والے مثبت اثرات کو پورا کرتی ہے۔2013میں  غربت لائن  جاری ہونے کے بعد مسلسل مالیاتی پالیسیوں  کے  غربت میں کمی پر اثرات بہت نمایاں تھے جو بنیادی طور پر بڑھے ہوئے ورکنگ فیملی الاؤنس اور اولڈ ایج لونگ الاؤنس کی مضبوط تاثیر کی عکاسی کرتا ہے۔جامع سوشل سیکیورٹی امداد اور اولڈ ایچ لیونگ الانس نے  بالترتیب 163000 اور  147100  افراد  کو غربت سے نکال دیا  اور غربت کی مجموعی شر ح  کو بالترتیب 2.3 فیصد پوائنٹس اور 2.1 فیصد پوائنٹس کمی کردی۔2018 میں بچوں میں غربت کی صورتحال بھی بہتر ہوئی۔ ورکنگ فیملی الانس میں اضافہ کے باعث بچوں میں غربت کی شر ح 1.8 فیصد پوائنٹس کم ہوئی جو 2017  میں 1.1 فیصد پوائنٹس کمی کے مقابلے میں نمایاں بہتری ہے۔

مزید : علاقائی