ٹریڈ لائسنس فیس میں تین سو فیصد اضافہ مسترد کرتے ہیں:اسلام آباد چیمبر

  ٹریڈ لائسنس فیس میں تین سو فیصد اضافہ مسترد کرتے ہیں:اسلام آباد چیمبر

  



اسلام آباد (آن لائن) اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے  ایم سی آئی کی جانب سے ٹریڈ لائسنس فیس میں یکطرفہ اور غیر قانونی طور پر تین سو فیصد اضافے کے فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے کہاہے کہ موجودہ صورتحال میں تاجر برادری کو اس پر تحفظات ہیں۔اسلام آباد چیمبر کے سینئر نائب صدر اور نائب صدر نے کہا ہے کہ کوئی بھی تاجر ٹیکس کی ادائیگی سے انکاری نہیں ہے لیکن اس اضافہ کا نہ تو کوئی قانونی جواز ہے اور نہ ہی  اس کیلئے مروجہ طریقہ کار کو اپنایا گیا ہے جبکہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ ایسے اقدامات سے موجودہ حکومت کی مشکلات میں اضافہ کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایک طرف ڈی ایم اے نے تجاوزات کے خاتمہ کیلئے علیحدہ شعبہ بنادیا ہے جس میں دفتر میں کام کرنے والے ایل ڈی سی کو سپروائزر بنا کر قوانین کی خلاف ورزی کی گئی ہے اور دوسری طرف ایف ٹین مرکز اور ایف سیون مرکز سمیت مختلف مارکیٹوں میں فٹ پاتھ اور ٹھیلے کرایہ پر دے دیئے گئے ہیں جن سے ڈی ایم اے کا عملہ بھتہ وصول کرتا ہے اور بھتہ نہ دینے والوں کا سامان اٹھا لیا جاتا ہے جو کہ سٹورکیپر اور جٹ نامی سپروائزر اپنے طور پر پیسے وصول کر کے ریلیز کرتا ہے اور ڈی ایم اے میں کرپشن کا بازار گرم ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے چیمبر میں تاجروں کے ایک وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ طاہر عباسی نے مزید کہا کہ فائر بریگیڈ کے ڈائریکٹر کو ڈی ایم اے کا ڈائریکٹریٹ بھی دے دیا گیا ہے جس کی وجہ سے فائر بریگیڈ کی استطاعت پر بھی سوالیہ نشان اٹھ رہے ہیں جبکہ فائر بریگیڈ کے ایک ڈپٹی ڈائریکٹر بھی ڈی ایم اے کی ڈیوٹی پر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سی ڈی اے میں افسران کی کوئی کمی نہیں ہے اور اسلام آباد کے مسائل سے آگاہ سی ڈی اے کے کسی بھی آفیسر کو ڈی ایم اے تعینات کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایم سی آئی صفائی ٹیکس لگانے کیلئے بھی کوشاں ہے جبکہ پہلے ہی کنزروینسی چارجز وصول کئے جا رہے ہیں۔

 لہذا دہرے ٹیکس کا نظام کسی کو بھی قابل قبول نہیں ہو گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ بلیو ایریا میں سی ڈی اے نے ایک پلازہ کی پارکنگ ختم کر دی تھی جبکہ دوسرے ہی روز ایم سی آئی نے یہ پارکنگ ٹھیکے پر دے دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کمرشل پلاٹ پر ٹھیکہ دینا قانونی طور پر درست نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ تاجر برادری ایم سی آئی کو جناح سپر مارکیٹ سمیت کسی بھی مارکیٹ میں پارکنگ ٹھیکے پرنہیں دینے دے گی اور جناح سپر مارکیٹ کی یونین پارکنگ خود چلائے گی۔ انہوں نے ایم سی آئی سے مطالبہ کیا کہ ایف ٹین سمیت تمامsitoutایریاز کے لائسنس منسوخ کرے اور تجاوزات کے ذمہ دار ڈی ایم اے کے اہلکاروں کے خلاف ایکشن لیا جائے۔ 

مزید : کامرس