پاکستان میں فروغ سیاحت کیلئے سعودی تعاون کی پیشکش،تنازعات کو سیاسی،سفارتی ذرائع سے حل کیا جائے:عمران خان

پاکستان میں فروغ سیاحت کیلئے سعودی تعاون کی پیشکش،تنازعات کو سیاسی،سفارتی ...

  



ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں) وزیراعظم عمران خان سعودی عرب کے ایک روزہ دورہ پر مدینہ منورہ  میں روضہ رسول ؐ پر حاضری دینے کے بعد دارا لحکومت ریاض پہنچ گئے  جہاں  رائل ٹرمینل پر ریاض کے گورنر شہزادہ  فیصل بن بندر بن عبدالعزیز اور پاکستان کے سفیر راجہ علی اعجاز نے استقبال کیا۔سعودی حکام اور پاکستانی سفارت خانے کے افسران بھی استقبال کیلئے موجود تھے۔سیکرٹری  خارجہ سہیل محمود بھی وزیر اعظم کے ہمراہ ہیں۔قبل ازیں وزیراعظم مدینہ منورہ پہنچے تو جدہ ایئرپورٹ کے رائل ٹرمینل پر مدینہ منورہ کے ڈپٹی گورنر اور جدہ میں پاکستانی قونصلر نے ان کا استقبال کیا۔ اپنے دور ے کے پہلے مرحلے میں وزیراعظم نے روضہ رسولؐ پر حاضری دی اور مسجد نبوی ؐمیں نوافل ادا کئے، اس موقع پر انہوں نے عالم اسلام کی یکجہتی، پاکستان کی ترقی و خوشحالی اور کشمیر کی آزادی کے لئے خصوصی دعائیں کیں،بعد ازاں وزیر اعظم ریاض پہنچے  جہاں  انہوں نے سعودی  ولی عہد محمدبن سلمان سے ملاقات  کی۔ وزیر اعظم سعودی قیادت سے ملاقات میں پاک سعودیہ تعلقات کے فروغ سمیت دونوں ممالک کے مابین مختلف معاہدوں پر بھی بات  کی گئی،۔دفتر خارجہ کی طرف سے جاری اعلامیہ کے مطابق سعودی حکومت نے پاکستان کی سیاحت میں اضافے کے لیے اقدامات کی پیشکش کردی جس کے لیے سعودی ٹیم جلد پاکستان کا دورہ کرے گی جاری کردہ اعلامیے کے مطابق وزیر اعظم نے دونوں ممالک کے درمیان اسٹریٹجک تعلقات کی اہمیت، پاک سعودی تعلقات، خطہ میں امن و استحکام، مشرق وسطی کے تنازعات کو سیاسی اور سفارتی ذرائع سے حل کرنے پر زور دیا۔وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان مشرق وسطی میں تنازعات ختم کرنے اور تناؤ کم کرنے میں کردار ادا کرتا رہے گا، پاکستان خطے اور دنیا کے امن کے لیے تمام تر کوششوں میں مدد فراہم کرتا رہے گا۔اعلامیے کے مطابق دورے کے دوران سعودی عرب نے پاکستان میں سیاحت کے شعبے کی ترقی میں ہر ممکن تعاون کی پیشکش کی اور سیاحت کے فروغ سے متعلق سعودی ٹیم جلد پاکستان کا دورہ کرے گی۔اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ مئی 2019ء  کے بعد وزیر اعظم عمران خان کا سعودی عرب کا یہ چوتھا دورہ تھا، مسلسل روابط اس اسٹریٹجک شراکت داری کی اہمیت کی عکاسی کرتے ہیں، اعلامیہ دونوں ممالک کی قیادت پاکستان سعودی تعلقات کو ایک نئی سطح پر لے جانے کے لیے پرعزم ہے۔ملاقات کے بعد وزیر اعظم عمران وطن واپسی کے لیے روانہ ہوگئے۔ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے وزیراعظم عمران خان کے لیے جذبہ خیر سگالی کا مظاہرہ کیا اور انہیں خصت کرنے ریاض ایئرپورٹ تک آئے۔۔ ذرائع کے مطابق۔،امریکی سینیٹر لنڈسے گراہم اتوار کو ہی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے بھی ملاقات کریں گے،ملاقاتوں میں پاک امریکہ تعلقات،امریکہ طالبان مذاکرات، افغانستان میں مفاہمتی عمل سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال ہو گا،اس کے بعد  وزیر اعظم عمران خان پیر کے روز بحرین روانہ ہوں گے۔

عمران خان

مزید : صفحہ اول


loading...