ایک فصل نے قرضے میں ڈوبے کسان کو کروڑ پتی بنادیا

ایک فصل نے قرضے میں ڈوبے کسان کو کروڑ پتی بنادیا
ایک فصل نے قرضے میں ڈوبے کسان کو کروڑ پتی بنادیا

  



نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت سے کسانوں کے متعلق جب بھی کوئی خبر آتی ہے، بری ہی آتی ہے تاہم اب ایک کسان کے متعلق ایسی اچھی خبر آئی ہے کہ سن کر آپ بھی اس کی قسمت پر رشک کریں گے۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق یہ کسان قرضوں میں ڈوبا ہوا تھا لیکن پھر پیاز کی ایک ہی فصل نے اسے کروڑ پتی بنا دیا۔ یہ 42سالہ ملیکرجونا نامی کسان بھارتی ریاست کرناٹک کے ضلع چترادرگا کا رہائشی ہے۔ اس نے بینک سے قرض لے رکھا تھا اور اسے چکانے میں ناکام تھا تاہم حالیہ مہینوں میں پیاز کی قیمت آسمان کو چھو رہی ہے۔ اس سے بھارت کے شہری تو پریشان ہیں لیکن اس سے ملیکر کا بھلا ہو گیا۔

رپورٹ کے مطابق نے اپنے کھیتوں میں پیاز کاشت کر رکھا تھا اور اس کی فصل بھی بہت اچھی ہوئی۔ اس کے کھیتوں سے 240ٹن (2لاکھ 40ہزار کلوگرام)پیاز پیدا ہوا۔ ان دنوں بھارت، بالخصوص کرناٹک، مغربی بنگال اور دیگر کچھ ریاستوں میں پیاز کی قیمت 200بھارتی روپے (تقریباً438پاکستانی روپے)تک پہنچی ہوئی ہے چنانچہ اس قیمت سے ملیکر کی پیداوار کا اندازہ لگائیں تو اس کی قیمت کروڑوں میں بنتی ہے۔ ملیکر کا کہنا تھا کہ ”میں نے اپنے کھیتوں میں پیاز کی فصل پر 15لاکھ روپے خرچ کیے تھے اور مجھے توقع تھی کہ پانچ سے دس لاکھ کا منافع ہو گا لیکن پیاز کی قیمت بڑھ جانے سے میری تو لاٹری نکل آئی۔ میں سوچ بھی نہیں سکتا تھا کہ ایک ہی فصل مجھے اتنا امیر بنا دے گی۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس