سانحہ پی آئی سی ،وزیر اعظم کابھانجا حسان نیازی اب تک گرفتار کیوں نہ ہو سکا؟نجی ٹی وی نے تہلکہ خیز انکشاف کر دیا

سانحہ پی آئی سی ،وزیر اعظم کابھانجا حسان نیازی اب تک گرفتار کیوں نہ ہو ...
سانحہ پی آئی سی ،وزیر اعظم کابھانجا حسان نیازی اب تک گرفتار کیوں نہ ہو سکا؟نجی ٹی وی نے تہلکہ خیز انکشاف کر دیا

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)سانحہ پنجاب انسٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں ملوث وزیر اعظم عمران خان کے بھانجے حسان نیازی کی گرفتاری پولیس کے لئےبڑا چیلنج بن گئی جبکہ پولیس ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ حسان نیازی اپنی گرفتاری سے بچنے کے لئے ساتھیوں سمیت لاہور سے  باہر چلا گیا ہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق سانحہ پی آئی سی کی  تحقیقات جاری ہیں جبکہ پولیس نامزد وکلاء کے ساتھ ساتھ توڑ  پھوڑ،گھیراؤ جلاؤ اور تشدد میں ملوث وکلاء کو سی سی ٹی وی  فوٹیج کے ذریعے شناخت کر رہی ہے اور اب تک 100 سے زائد شرپسند وکلاء کی شناخت ہو چکی ہے جن کی گرفتاریوں کے لئے پولیس مختلف مقامات پر چھاپے مار رہی ہے۔دوسری طرف 4 روز گذرنے کے باوجود 5   چھاپوں کے باوجود پولیس وزیر اعظم عمران خان کے بھانجے بیرسٹر حسان نیازی کو گرفتار کرنے میں مکمل ناکام دکھائی دے رہی ہے اور ملزم کی گرفتاری پولیس کے لئے ایک بڑا چیلنج بن  چکی ہے۔حسان نیازی کی گرفتاری کے حوالے سے جب ڈی آئی جی انویسٹی گیشن سے بات کی گئی تو ان کا کہنا تھا کہ جس نے بھی قانون شکنی کی ہے اُسے گرفتار کیا جائے گا،کسی بھی ملزم کی گرفتاری کےلیےہم پرکسی قسم کا کوئی دباؤ نہیں ہے۔دوسری طرف پولیس ذرائع نےدعویٰ کیا ہے کہ حسان نیازی گرفتاری کے خوف سے اپنے  ساتھیوں سمیت لاہور سے باہر کسی نامعلوم مقام پر منتقل ہو چکا ہے تاہم پولیس اس کی تلاش میں اپنی کوششیں جاری رکھے ہوئے ہے۔یاد رہے کہ بیرسٹر حسان نیازی سانحہ پی آئی سی کےموقع پر  توڑ پھوڑ، پولیس وین کو نذر آتش کرنے میں پیش پیش تھا اور اس واقعہ کےفوری بعد سوشل میڈیا پر حسان نیازی کی حملے کے وقت کی تصویریں اور مختلف ویڈیوز شیئر ہونا شروع ہو گئی تھیں ۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور


loading...