قتل کے مقدمہ مےں ملوث ملزم کی ضمانت منظور ،رہائی کا حکم

قتل کے مقدمہ مےں ملوث ملزم کی ضمانت منظور ،رہائی کا حکم

  

لاہور (نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے مسٹر جسٹس سردار طارق مسعود نے قتل کے مقدمہ میں ملوث ملزم محمد اختر کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے اسے رہا کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ فاضل عدالت نے قرار دیا ہے کہ کسی بھی مزید انکوئری کے مشکوک کیس میں کسی ملزم کو غیر معینہ مدت تک جیل میں نہیں رکھا جا سکتا۔ گذشتہ روز دوران سماعت درخواست گذار کے وکیل محمد عارف گوندل ایڈووکیٹ نے عدالت کو اپنے دلائل میں کہا کہ ملزم اختر کے شریک ملزمان کی ضمانت ہو چکی ہے اس کے علاوہ ملزم کے ذمہ کوئی خاص زخم یا فائر نہیں لگایا گیا جبکہ مدعیوں اور دوسری پارٹیوں کے متعدد لوگ قتل ہو چکے ہیں درخواست گذار کو صرف سابقہ دشمنی کے باعث اس مقدمہ میں ملوث کیا گیا ہے انہوں نے عدالت کو یہ بھی بتایا کہ متوفی عمران کو صرف دو زخم ہیں لیکن 19لوگوں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا جبکہ ملزم غیر معینہ مدت تک جیل کی سلاخوں کے پیچھے ہے اور اگر ویسے ضمانت کا کیس بنتا ہو تو اشتہاری ہونا ضمانت خارج کرنے کے لیے کافی نہیں ہے لہذا عدالت سے استدعا ہے کہ وہ اس امر کا نوٹس لے اور ملزم کی دائر درخواست ضمانت منظور کرے۔ فاضل عدالت نے ملزم کو دو لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکوں کے عوض اسے رہا کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -