بیٹے کا ایسا مطالبہ کہ بوڑھا باپ قبرستان میں رہنے پر مجبورہو گیا ، وجہ ایسی کہ آپ بھی غصے سے تلملا اٹھیں گے

بیٹے کا ایسا مطالبہ کہ بوڑھا باپ قبرستان میں رہنے پر مجبورہو گیا ، وجہ ایسی ...
بیٹے کا ایسا مطالبہ کہ بوڑھا باپ قبرستان میں رہنے پر مجبورہو گیا ، وجہ ایسی کہ آپ بھی غصے سے تلملا اٹھیں گے

  

کولمبو( مانیٹرنگ ڈیسک) بیٹوں کو بڑھاپے کا سہارا کہا جاتا ہے لیکن بعض اوقات عاقبت نا اندیش فرزند اس بات کو پس پشت ڈال دیتے ہیں کہ کس طرح ان کے بوڑھے باپ نے ان کو پروان چڑھایا اور ان کو اس قابل بنایا کہ وہ دنیا میں سر اٹھا کر چلنے کے قابل بنے۔ ایسا ہی ایک  بد بخت بیٹا سری لنکا کے قصبے "Homagama" میں تھا جس نے اپنے  کے  77سالہ باپ کو  گھر سے نکال دیا اور ایسی شرط عائد کی کہ بوڑھا شخص  مطالبہ پورا نہ کر سکا اور اسے  مجبورا مقامی قبرستان میں رات گزارنا پڑ گئی۔

سری لنکن اخبار کے مطابق بوڑھا شخص تلغاکندا(Thalagahakanda)کا رہائشی  اور دو بیٹوں کا باپ ہے ، اس کا کہنا ہے کہ وہ گزشتہ صبح 4بجے مقامی ہسپتال میں دوائی لینے کیلئے گھر سے نکلا تو اس کے پیچھے پیچھے اس کے بیٹوں کے دو پالتو کتے بھی گھر سے باہر نکل گئے تاہم جب میں گھر واپس لوٹا تو کتے گھر پر موجود نہ تھے جس پر میری بہو  نے  میرے  ساتھ تلخ کلامی کی اور کتوں کی گمشدگی پر مجھے  خوب ڈانٹا۔ جس کے بعد اس نے اپنے خاوند  (میرے بیٹے )کوکتوں کی گمشدگی کے بارے میں بتایا جس پر وہ بھی مشتعل ہو گیا اور اس نے بھی اپنی بیگم کی تائید کرتے ہوئے مجھے خوب جھڑکا ، لعن طعن کی اور گھر سے باہر نکالتے ہوئے  شرط عائد کی کہ اگر میں گمشدہ کتے ڈھونڈ کر   لایا تو گھر آسکتا ہوں  وگرنہ گھر میں میرے لئے کوئی جگہ نہیں ہے۔ مذکورہ شخص نے پولیس کو بتایا کہ اس نے گزشتہ شب قبرستان میں ایک بنچ پر سو کر گزاری ہے ، پولیس نے معاملہ کی تفتیش شروع کر دی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -